طالبان کے حملے میں 7 سال کی دعاؤں سے پیدا ہونے والا بچہ بھی شہید

افغانستان کےدارالحکومت کابل کے زچہ بچہ اسپتال پر طالبان دہشت گردوں کے حملے میں ایک ایسا بچہ بھی شہید ہوا ہے جو 7 سال کی دعاؤں کے بعد ماں کی گود میں آیا تھا۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق افغانستان کےدارالحکومت کابل کے زچہ بچہ  اسپتال پر طالبان دہشت گردوں کے حملے میں ایک ایسا بچہ بھی شہید ہوا ہے جو 7 سال کی دعاؤں کے بعد ماں کی گود میں آیا تھا۔27  سالہ زینب نے بتایا کہ اس نے اپنے بچے کے لیے 7 سال دعائیں کیں، منگل کی صبح وہ پیدا ہوا تو اس کا نام اُمید رکھا۔

بچے کی پیدائش کے بعد وہ اپنے آبائی علاقے بامیان جانے کی تیاری کر رہے تھے کہ  پولیس اہل کاروں کی وردی  میں دہشت گرد زچہ بچہ اسپتال میں داخل ہوئے جنہوں نے اندھا دھند فائرنگ شروع کر دی۔ فائرنگ سے بچہ امید  بھی شہید ہو گیا جسے دُنیا میں آئے صرف چار گھنٹے ہوئے تھے۔

واضح رہے کہ 2 روز قبل افغانستان کے دارالحکومت کابل میں زچہ بچہ اسپتال پر وہابی دہشت گردوں کے حملے میں درجنوں عورتیں اور بچے شہید ہوگئے۔ ہیومن رائٹس واچ نے طالبان اور داعش دہشت گردوں  ان حملوں کو جنگی جرم قرار دیا ہے۔

News Code 1900176

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 10 =