جنرل باجوہ اور جنرل باقری کا سرحد پر سکیورٹی اقدامات مزید سخت کرنے کے عزم کا اعادہ

پاکستان کے فوجی سربراہ میجر جنرل قمر جاوید باجوہ اور ایرانی فوج کے چیف آف اسٹاف میجر جنرل محمد باقری نے ٹیلیفون پر گفتگو میں دہشت گردی کی روک تھام کے سلسلے میں سرحد پر سکیورٹی اقدامات مزید سخت کرنے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق پاکستان کے فوجی سربراہ میجر جنرل قمر جاوید باجوہ اور ایرانی فوج کے چیف آف اسٹاف میجر جنرل محمد باقری نے ٹیلیفون پر گفتگو میں دہشت گردی کی روک تھام کے سلسلے میں سرحد پر سکیورٹی اقدامات مزید سخت کرنے کے عزم کا اعادہ کیا ہے۔اطلاعات کے مطابق پاکستانی فوج کے سربراہ نے ٹیلیفون پر باہمی گفتگو میں کورونا وائرس کی روکتھام کے سلسلے میں بھی ایرانی فوج کے چیف آف اسٹاف کے ساتھ تبادلہ خیال کیا۔ ایران اور پاکستان کے فوجی سربراہان نے سرحد پر دہشت گردی کے روک تھام کے سلسلے میں سرحد کے اطراف سکیورٹی اقدامات مزید سخت کرنے کے عزم کا اعادہ بھی کیا۔ واضح رہے کہ پاکستان کی سرحد پر جند الشیطان نامی دہشت گرد گروہ سرگرم ہے جس نے متعدد ایرانی فوجی اہلکاروں کو اغوا کرکے پاکستان منتقل کیا اور آج بھی اس گروہ کے قبضہ میں کم سے کم تین فوجی اہلکار موجود ہیں۔ ایران پاکستانی فوج کے تعاون سے اپنے متعدد اغوا شدہ اہلکاروں کو آزاد بھی کرواچکا ہے۔

News Code 1900115

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 8 =