متحدہ عرب امارات میں تراویح پڑھنے والے 4 خاندان کورونا وائرس کا شکار ہوگئے

متحدہ عرب امارات کے شہر دبئی میں ایک گھر میں 4 خاندانوں نے جمع ہو کر ایک ساتھ تراویح پڑھی جس کے بعد وہ کورونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے عرب ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات کے شہر دبئی میں ایک گھر میں 4 خاندانوں نے جمع ہو کر ایک ساتھ تراویح پڑھی جس کے بعد وہ کورونا وائرس کا شکار ہوگئے ہیں ۔ دبئی میں اماراتی حکومت کی ترجمان ڈاکٹر آمنہ الشمسی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ شہری کورونا وبا کے دوران رمضان کی نئی روایات پر عمل درآمد کریں، دبئی کے رہائشیوں کو خبـردار کیا گيا ہے کہ لوگ افطار تقسیم کرنے سے باز رہیں۔

حکومت نے سخت ہدایت کی ہے کہ کھانا گھر سے پکا کر باہر ضرورت مندوں میں تقسیم نہ کریں، یہ مہربانی زحمت بن سکتی ہے کیونکہ اس سے وائرس پھیل سکتا ہے۔

ڈاکٹر آمنہ الشمسی نے کہا کہ لوگ حکومت امارات کی جانب سے اعلان کردہ خیراتی اداروں کو افطار مہیا کریں، یہ خیراتی ادارے مکمل ہدایت کے ساتھ افطار تقسیم کر رہے ہیں۔

ترجمان حکومت امارات نے بتایا کہ دبئی میں چار خاندانوں نے کورونا وائرس سے بچاؤکی ہدایات کی خلاف ورزی کی جس کے سبب وہ وائرس کا شکار ہوگئے۔

کورونا وائرس کا شکار ہونے والے خاندان کے متعدد افراد کو اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جبکہ کئی افراد کو گھر میں قرنطینہ کی ہدایت کی گئی ہے۔

News Code 1900104

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 1 =