تہران میں برطانوی سفارتخانہ کے بارے میں ابھی تک مذاکرات انجام پذیر نہیں ہوئے

اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے کہا ہے کہ برطانوی حکام کے ساتھ تہران میں برطانوی سفارتخانہ کو پہنچنے والے نقصانات کے بارے میں ابھی تک مذاکرات نہیں ہوئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے وزیر خارجہ محمد جواد ظریف نے تہران میں برطانوی سفارتخانہ کو پہنچنے والے نقصانات کی طرف اشارہ کرتے ہوغے کہا ہے کہ برطانوی حکام  کے ساتھ تہران میں برطانوی سفارتخانہ کو پہنچنے والے نقصانات کے بارے میں ابھی تک مذاکرات نہیں ہوئے ہیں اور ایران اس سلسلے میں بین الاقوامی قوانین کی روشنی میں مذاکرات کے لئے آمادہ ہے ۔ تہران میں سفارتخانوں کی حفاظت کی ذمہ داری ایران پر عائد ہوتی ہے ایران کے تمام حکام کا اس بات پر اتفاق ہے۔ ایرانی وزیر خارجہ نے کہا کہ اس سلسلے میں دونوں فریقوں کے درمیان مذاکرات ضروری ہیں اور ابھی تک اس بارے میں کسی قسم کے مذاکرات انجام پذیر نہیں ہوئے ہیں۔

ظریف نے امریکہ کے ساتھ ہر قسم کے مذاکرات کو رد کرتے ہوئے کہا کہ امریکیوں نے ثابت کردیا ہے کہ وہ ناقابل اعتماد ہیں کیونکہ انھوں نے گذشتہ وسیع اور چند جانبہ مذاکرات کے نتیجے میں ہونے والے مشترکہ ایٹمی معاہدے کو ہی توڑ دیا اور ثابت کردیا کہ امریکی حکام ناقابل اعتماد ہیں۔

News Code 1900097

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 1 =