بھارت میں قرنطینہ میں موجود افراد کو کھانا پھینک کردیا جاتا ہے

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک شخص حفاظتی لباس پہنے ایک دروازے کے اندر کھانے کا سامان اور پانی کی بوتلیں پھینک رہا ہے ۔

مہر خبررساں ایجنسی نے سوشل میڈیا کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ایک ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک شخص حفاظتی لباس پہنے ایک دروازے کے اندر کھانے کا سامان اور پانی کی بوتلیں پھینک رہا ہے اور دروازے کے دوسری طرف کھڑے افراد اسے حاصل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ یہ ویڈیو مبینہ طور پر آگرہ کے ہندوستان کالج کی ہے جسے مقامی انتظامیہ نے قرنطینہ سینٹر میں تبدیل کر دیا ہے۔ مقامی افراد کا دعویٰ ہے کہ اس قرنطینہ مرکز میں اسی طرح سے کھانا تقسیم کیا جاتا ہے۔ واضح رہے کہ آگرہ میں کورونا وائرس کی صورتِ حال نہایت خراب ہے، آگرہ کے میئر نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ شہر میں ووہان جیسی صورتِ حال ہوسکتی ہے کیونکہ مقامی انتظامیہ کی کارکردگی نہایت خراب ہے۔

News Code 1899836

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 7 + 11 =