پاکستان میں ڈاکٹرز ایسوسی ایشن کا لاک ڈاؤن سخت کرنے کا مطالبہ

پاکستان میں ڈاکٹرز ایسوسی ایشن نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ملک بھر میں لاک ڈاؤن کو سخت کیا جائے تاکہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکا جاسکے۔

 مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں ڈاکٹرز ایسوسی ایشن نے وفاقی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ملک بھر میں لاک ڈاؤن کو سخت کیا جائے تاکہ کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکا جاسکے۔ کراچی پریس کلب میں ڈاکٹرز نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں کورونا کے کیسز سامنے آنے کے بعد لاک ڈاؤن کیا گیا، جس میں تمام طبقات سمیت علمائے کرام نے بھی بھرپور تعاون کیا، اگر لاک ڈاوَن نہ ہوتا تو آج اس وبا کے کیسز بہت زیادہ ہوتے۔ ڈاکٹرز کا کہنا تھا کہ 14 اپریل کے بعد سے لاک ڈاؤن میں نرمی کے بعد کورونا مریضوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہوا، ڈاکٹرز کمیونٹی میں بھی تشویش ہے کہ کورونا کے کیسز بڑھ رہے ہیں، اب لاک ڈاؤن کے نام پر مذاق ہو رہا ہے، رمضان کے قریب مساجد کھولنے پر بھی زور دیا گیا ہے، اگر مریضوں کی تعداد بڑھی تو قابو کرنا مشکل ہوجائے گا،  ایسا نہ ہوکہ ہم سڑکوں پر لوگوں کا علاج کر رہے ہوں۔

ڈاکٹرز نے مطالبہ کیا کہ علما کرام اور صدر مملکت کےدرمیان جونکات طے پائے، ان پر اور مساجد کھولنے سے متعلق فیصلے پر علمائے کرام نظرثانی کریں، جب کہ حکومت سے بھی مطالبہ کرتے ہیں کہ لاک ڈاؤن کو مزید سخت کیا جائے۔

News Code 1899616

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha