ایران کی عالمی ادارہ صحت کے فنڈ روکنے پر امریکہ کے غیر انسانی اقدام کی مذمت

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے امریکی صدر کی طرف سے عالمی ادارہ صحت کے فنڈ کو روکنے کے اقدام کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدرٹرمپ نے عالمی ادارہ صحت کے فنڈ کو روک کربشریت کے خلاف سنگین جرم کا ارتکاب کیا ہے۔

مہر خبررساں کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان سید عباس موسوی  نے عالمی ادارہ صحت کے فنڈ روکنے کے امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ  کے اقدام کو بشریت کے خلاف سنگین جرم قراردیتے ہوئے اس کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔ ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان  نے کہا کہ پوری  دنیا کو کورونا وائرس کے بحران کا شکار ہے اور ایسی صورتحال میں امریکہ کی طرف سے  ایک اہم عالمی ادارے کے فنڈ کو روکنا اس بات کی واضح  دلیل ہے کہ امریکہ  بین الاقوامی اداروں کو کمزور کررہا ہے اور اس سلسلے میں امریکہ کی یکطرفہ پالیسی قابل مذمت ہے۔ سید عباس موسوی نے کہا کہ امریکہ نے بدترین شرائط میں عالمی ادارہ صحت کو تنہا کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔عالمی برادری کو امریکہ کے اس اقدام کی بھر پور مذمت کرنی چاہیے کیونکہ امریکہ کا یہ اقدام  غیر انسانی اور بشریت کے خلاف جنگ ہے۔ واضح رہے کہ امریکی صدر ٹرمپ نے اقوام متحدہ کے  عالمی ادارہ صحت کو فنڈ کی فراہمی یہ کہہ کر بند کردی ہے کہ عالمی ادارہ صحت نے کورونا وائرس کی روک تھام کے سلسلے میں کوئی اقدام نہیں کیا اور عالمی ادارہ صحت نے اس سلسلے میں چین کے ساتھ تعاون کیا ہے۔ ادھر اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل نے بھی امریکہ کے اس اقدام پر شدید تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ امریکہ کو تسلط پسندانہ نظریہ ترک کردینا چاہیے اور عالمی برادری کے ساتھ ملکر کورونا وائرس کا مقابلہ کرنا چاہیے۔

News Code 1899434

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 1 =