افغان حکومت کا 100 طالبان قیدیوں کو آزاد کرنے کا اعلان

افغانستان کی حکومت نے کہا ہے کہ طالبان کے 100 قیدیوں کو رہا کیا جارہا ہے جس میں اہم کمانڈرز شامل نہیں ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے الجزیرہ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان کی حکومت نے کہا ہے کہ طالبان کے 100 قیدیوں کو رہا کیا جارہا ہے جس میں اہم کمانڈرز شامل نہیں ہیں۔ طالبان دہشت گردوں نے اس سے قبل افغانستان کی حکومت سے مذاکرات متوقف کرنے کا اعلان کیا تھا اور امریکہ کو خبردار کیا تھا کہ قطر معاہدہ ٹوٹنے کا خطرہ ہے۔

اطلاعات کے مطابق افغانستان کی سلامتی کونسل کے ترجمان جاوید فیصل کا کہنا تھا کہ 'طالبان کے 100 قیدیوں کو رہا کیا جائے گا'۔

ان کا کہنا تھا کہ 'ہم معاہدے کے مطابق اپنا کردار نبھا رہے ہیں اور امن کا عمل آگے بڑھنا چاہیے'۔

جاوید فیصل نے کہا کہ 'جن قیدیوں کو رہا کیا جارہا ہے ان میں 15 کمانڈرز شامل نہیں ہیں اور اضافی قیدیوں کو بھی رہا کیا جائے گا جس کا انحصار طالبان پر ہے کہ وہ کیا کرتے ہیں'۔

یاد رہے کہ امریکا اور طالبان کے درمیان 29 فروری کو قطر کے دارالحکومت دوحہ میں امن معاہدہ ہوا تھا جس میں طے پایا تھا کہ افغان حکومت طالبان کے 5 ہزار قیدیوں کو رہا کرے گی جس کے بدلے طالبان حکومت کے ایک ہزار قیدی رہا کریں گے۔

News Code 1899252

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • captcha