طالبان کا افغان حکومت سے مذاکرات ختم کرنے کا اعلان

افغان حکومت اور طالبان کے درمیان قیدیوں کی رہائی میں اختلاف کے بعد طالبان نے افغان حکومت سے مذاکرات ختم کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افق کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغان حکومت اور طالبان کے درمیان قیدیوں کی رہائی میں اختلاف  کے بعد  طالبان نے افغان حکومت سے مذاکرات ختم کرنے کا اعلان  کردیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق طالبان کے سیاسی دفتر کے ترجمان سہیل شاہین نے سماجی رابطے کی سائٹ ٹوئٹر پر افغان حکومت سے مذاکرات ختم کرنے کا اعلان  کرتے ہوئے کہا کہ ٹیم کو قیدیوں کی رہائی کے عمل کی تصدیق کے لیے کابل بھیجا گیا تھا تاکہ تصدیق کی جاسکے کہ معاہدے کے تحت قیدیوں کی رہائی کا عمل شروع ہوا ہے کہ نہیں۔

طالبان کے سیاسی دفتر کے ترجمان نے کہا کہ قیدیوں کی رہائی کا عمل ایک بار پھر تاخیر کا شکار ہوگیا ہے اور صرف بہانے بنائے جارہے ہیں تاہم اب قیدیوں کی رہائی کے معاملے پر ہماری ٹیم کسی مذاکراتی عمل کا حصہ نہیں بنے گی۔ واضح رہے کہ رواں سال فروری میں امریکہ اور طالبان نے امن معاہدے پر دستخط کیے تھے، معاہدے کے مطابق افغانستان میں القاعدہ اور داعش سمیت دیگر تنظیموں کے نیٹ ورک پر پابندی ہوگی، دہشت گرد تنظیموں کے لیے بھرتیاں کرنے اور فنڈز اکٹھا کرنے کی بھی اجازت نہیں ہوگی جب کہ معاہدے کے تحت افغان حکومت نے 5 ہزار گرفتار طالبان دہشت گردوں کو رہا بھی کرنا تھا۔

News Code 1899209

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 1 =