نواز شریف نے وزارت خارجہ کے حکام کو بھارت کے خلاف بولنے سے منع کیا تھا

پاکستان کی وزارت خارجہ کی سابق ترجمان نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے بارے میں سنسنی خیز انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم میاں نواز شریف نے وزارت خارجہ کےحکام کو بھارت کےخلاف بولنے سے بالکل منع کیا تھا۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ اور ڈان کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کی وزارت خارجہ کی سابق ترجمان تسنیم اسلم نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کے بارے میں سنسنی خیز انکشاف کرتے ہوئے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم میاں نواز شریف نے وزارت خارجہ کےحکام کو بھارت کےخلاف بولنے سے بالکل منع کیا تھا۔

تسنیم اسلم نے یوٹیوب چینل کے صحافی کے ساتھ گفتگو کرتے ہوئےکہا کہ نواز شریف کے بھارت میں کاروباری مفادات تھے اور جب انہوں نے بطور وزیراعظم بھارت کا دورہ کیا اور نریندر مودی کی حلف برادری کی تقریب میں شرکت کی تھی تو وہ بھارت کے زیر تسلط کشمیر کی سیاسی جماعت حریت کانفرنس کے رہنماؤں سے نہیں ملے۔

ان کا کہنا تھا کہ "عام طور پر پاکستان کا ہر وزیراعظم جب بھارت کا دورہ کرتا ہے تو وہ حریت قیادت سے ملاقات کرتا ہے لیکن نواز شریف ان سے نہیں ملے تھے" ۔ خیال رہے کہ سابق وزیراعظم نواز شریف نے 2014 میں بھارت کا دورہ کیا تھا۔ واضح رہے کہ تسنیم اسلم 2 مرتبہ پاکستانی وزارت خارجہ کی ترجمان رہ چکی ہیں، پہلی مرتبہ وہ سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کی حکومت کے دوران 2005 سے 2007 تک اس عہدے پر رہیں جبکہ دوسری مرتبہ 2013 سے 2017 تک پاکستان مسلم لیگ (ن) کے دور حکومت میں انہوں نے یہ فرائض انجام دیئے۔

News Code 1898659

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 6 =