پاکستانی حکومت کا کورونا وائرس کے باعث ملک بھر کے تعلیمی ادارے 5 اپریل تک بند رکھنے کا فیصلہ

پاکستان کی قومی سلامتی کمیٹی نے کورونا وائرس کے باعث ملک بھر کے تعلیمی ادارے 5 اپریل تک بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کی قومی سلامتی کمیٹی نے کورونا وائرس کے باعث  ملک بھر کے تعلیمی ادارے 5 اپریل تک بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔  اطلاعات کے مطابق پاکستان کے وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت قومی سلامتی کمیٹی کا اہم اجلاس ہوا جس میں تینوں مسلح افواج کے سربراہان اور ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل فیض حمید سمیت وفاقی وزرا وسیکریٹریز نے شرکت کی ۔قومی سلامتی اجلاس میں کورونا وائرس سے متعلق صورتحال پر غور کیا گیا اور قومی سلامتی کمیٹی نے کورونا وائرس کی روک تھام سے متعلق اہم فیصلے کیے۔قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ افغانستان اور ایران کے دونوں بارڈر دو ہفتوں کے لیے بند رہیں گے۔

اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ پی ایس ایل کے جو میچز لاہور منتقل کیے گئے ہیں ان میں تماشائیوں کو شرکت کی اجازت نہیں ہوگی اور وہ بند اسٹیڈیم میں کرائے جائیں گے۔

قومی سلامتی اجلاس میں ایئر پورٹس اور بارڈرز پر نگرانی کا عمل سخت کرنے جب کہ لاہور ، کراچی اور اسلام آباد کے علاوہ باقی ایئر پورٹس پر انٹرنیشنل فلائٹس معطل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

 پاکستان کےوقاقی وزیرتعلیم شفقت محمود نے اپنی ٹوئٹ میں بتایا کہ قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ملک بھر میں 5 اپریل تک تمام سرکاری ونجی تعلیمی ادارے بند رہیں گے جس میں مدارس بھی شامل ہیں  جب کہ 27 مارچ کو تعلیمی اداروں کی بندش کے فیصلے پر نظرثانی ہوگی۔

News Code 1898587

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 8 =