طالبان نے قیدیوں کی رہائی کے لئے صدر اشرف غنی کا منصوبہ رد کردیا

طالبان نے اپنے 5 ہزار دہشت گرد قیدیوں کی رہائی کے لیے افغان صدر اشرف غنی کی جانب سے پیش کردہ مشروط پلان کو مسترد کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ طالبان نے اپنے 5 ہزار دہشت گرد قیدیوں کی رہائی کے لیے افغان صدر اشرف غنی کی جانب سے پیش کردہ مشروط پلان کو مسترد کردیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق افغان طالبان کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ صدر اشرف غنی کا قیدیوں کی رہائی کے لیے شرائط رکھنا امریکہ سے امن معاہدے کی سراسر خلاف ورزی ہے۔ ترجمان سہیل شاہین کا افغان صدر کی شرائط کو مسترد کرتے ہوئے مزید کہنا تھا کہ امن معاہدے میں 5 ہزار طالبان قیدیوں کی غیر مشروط رہائی درج ہے جس کے بعد ہی انٹرا افغان مذاکرات کا انعقاد ممکن ہوسکے گا۔

ترجمان افغان طالبان کی جانب سے یہ بیان اُس وقت سامنے آیا ہے جب نو منتخب افغان صدر نے 1500 طالبان اسیروں کی رہائی کا پروانہ جاری کیا ہے جب کہ بقیہ کی رہائی کو ملک میں پر تشدد کارروائیوں میں کمی اور انٹر افغان مذاکرات سے مشروط کیا ہے جب کہ رہا ہونے والوں کو جنگ میں شرکت نہ کرنے کا حلف نامہ جمع کرانا ہوگا۔

News Code 1898528

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 0 =