ہم بھارتی مسلمانوں پر ظلم و ستم جاری رہنے کی اجازت نہیں دیں گے/ بھارتی سفیر کو طلب کرنا کافی نہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کی قومی سلامتی کے رکن علاءالدین بروجردی نے بھارتی مسلمانوں کے خلاف بھارتی حکومت کے بھیانک مظالم کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم بھارتی مسلمانوں کے ساتھ ہیں بھارتی حکومت کو انھیں ظلم و ستم کا نشانہ بنانے کی اجازت نہیں دیں گے ۔

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کی قومی سلامتی کے رکن علاءالدین بروجردی نے مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کے ساتھ گفتگو میں بھارتی مسلمانوں کے خلاف بھارتی حکومت کے بھیانک مظالم کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم بھارتی مسلمانوں کے ساتھ ہیں بھارتی حکومت کو انھیں ظلم و ستم کا  نشانہ بنانے کی اجازت نہیں دیں گے۔ انھوں نے ایرانی حکام پر زوردیا کہ وہ اس سلسلے میں صرف بھارتی سفیر کو طلب کرنے پر اکتفا نہ کریں گے بلکہ بھارتی حکومت کے ظالمانہ اور بہیمانہ اقدامات کے خلاف جامع اقدامات کی ضرورت ہے بھارت کی موجودہ حکومت بھارت میں امریکی اور اسرائیل ایجنڈے پر کام کررہی ہے اور ہندو دہشت گردوں کی پشتپناہی کرکے وہ مسلمانوں کو ان کے بنیادی حقوق سے محروم کرنا چاہتی ہے ۔ انھوں نے کہا کہ بھارت مختلف اقوام اور مذاہب کا گہوارہ ہے بھارت مدیریت کے لحاظ سے خاص حساسیت کا حامل ملک ہے۔ علاء الدین بروجردی نے کہا کہ امریکی حکام ہمیشہ انسانی حقوق کی حمایت کا دعوی کرتے ہیں لیکن وہ بھی بھارت میں مسلمانوں پر ہونے والے وحشیانہ مظالم پر خاموش تماشائي بنے ہوئے ہیں۔

انھوں نے کہا کہ ایران بھارتی مسلمانوں کو تنہا نہیں چھوڑےگا ہمارے حکام نے کورونا کے دباؤ کے باوجود بھارتی حکومت کے ظالمانہ اقدامات کے خلاف آواز بلند کی ہے ۔ایرانی حکام اس سلسلے میں اپنی قانونی ذمہ داریوں پر عمل کریں گے اور تہران میں بھارتی سفیر کو وزارت خارجہ میں طلب کرنے پر اکتفا نہیں کریں گے بلکہ مزید اقدامات عمل میں لائیں گے۔

News Code 1898481

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 3 =