کابل میں مجلس ترحیم کے دوران خود کش حملہ / 27 افراد شہید

افغانستان کے دارالحکومت کابل میں شہید عبدالعلی مزاری کی برسی اور مجلس ترحیم کے موقع پر ہونے والی سرکاری تقریب میں خود کش حملے کے نتیجے میں 27 افراد شہید ہوگئےجبکہ سابق صد حامد کرزای اور عبداللہ عبداللہ بال بال بچ گئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے اسپوٹنک کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان کے دارالحکومت کابل میں شہید عبدالعلی مزاری کی برسی کے موقع پر ہونے والی سرکاری تقریب میں خود کش حملے کے نتیجے میں 27 افراد شہید ہوگئےجبکہ سابق صدر حامد کرزای اور عبداللہ عبداللہ بال بال بچ گئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق کابل میں حزب وحدت پارٹی کے سابق سربراہ شہید عبد العلی مزاری کی برسی کی مناسبت سے منعقدہ تقریب میں خود کش حملہ کیا گیا ہے، تقریب میں تمام بڑی سیاسی جماعتوں کے سربراہان اور اعلیٰ سطح کے حکومتی حکام کے علاوہ افغانستان کے سابق چیف ایگزیکیٹو عبد اللہ عبداللہ اور سابق صدر حامد کرزئی بھی موجود تھے۔ افغان وزارت داخلہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ خود کش حملے میں 27 افراد شہید ہوگئے جب کہ 29 زخمی ہیں تاہم سابق چیف ایگزیکیٹو عبد اللہ عبداللہ اور حامد اللہ کرزئی حملے میں بال بال بچ گئے۔ شہید اور زخمی ہونے والوں کی شناخت کا عمل جاری ہے۔ افغان صدر اشرف غنی نے خود کش حملے کو جنگی جرم قرار دیتے ہوئے واقعے کی  پر زور مذمت کی ہے۔

News Code 1898395

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 12 =