صوبہ قندوز میں طالبان کے حملے میں 16 افغان فوجی ہلاک

افغانستان کے صوبے قندوزکے ضلع امام صاحب میں طالبان نے حملہ کیا ہے جس کے نتیجے میں 16 افغان فوجی ہلاک ہوگئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے افغان ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ افغانستان کے صوبے قندوزکے ضلع امام صاحب میں طالبان نے حملہ کیا ہے جس کے نتیجے میں 16 افغان فوجی ہلاک ہوگئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق طالبان کے حملے کے نتیجے میں 16افغان فوجی ہلاک ہوئے ہیں جبکہ طالبان نے 10 بارڈر سکیورٹی آفیسرز کو یرغمال بھی بنالیا ہے۔واضح رہے کہ 29 فروری کو قطر کے دارالحکومت دوحہ میں امریکہ اور افغان طالبان کے درمیان " معاہدہ برائے افغان امن 2020ء " طے پاگیا ہے جس پر دونوں جانب سے دستخط بھی ہو گئے ہیں۔افغان طالبان اور امریکی حکومت کے درمیان تاریخی امن معاہدے پر افغان طالبان کے نمائندے ملا عبدالغنی برادر اور امریکہ کے نمائندہ خصوصی برائے افغانستان امن عمل زلمے خلیل زاد نے دستخط کیے۔ طالبان نے امریکہ کے فوجیوں کے بجائے اب افغان فوجیوں کو اپنے حملوں کا نشانہ بنایا تاکہ افغان حکومت پر دباؤ ڈال کر اقتدار پر قابض ہوسکے امریکہ نے لڑائی کا رخ اب مکمل طور پر افغانیوں کے درمیان موڑ دیا ہے۔ طالبان نے کہا ہے کہ وہ افغان حکومت کے فوجیوں کو اب نشانہ بنائیں گے۔ عالمی مبصرین امریکہ اور طالبان کے درمیان ہونے والے معاہدے پر شکوک و شبہات کا اظہار کررہے ہیں کیونکہ امریکہ اس سے قبل بھی کئی معاہدوں کو توڑ چکا ہے۔ تجزيہ نگار امریکہ اور طالبان کے درمیان معاہدے کو " صدی ڈیل " جیسا معاہدہ قراردے رہے ہیں جس میں اصل فریق موجود ہی نہیں ۔

News Code 1898325

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 10 =