ترک فوج نے ادلب میں کردوں کے خلاف جنگی جرائم کا ارتکاب کیا

اقوام متحدہ کی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ شام کے علاقے ادلب میں کردوں کیخلاف فوجی کارروائی کے دوران ترکی کے فوجیوں نے جنگی جرائم کا ارتکاب کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ اقوام متحدہ کی ایک رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ شام کے علاقے ادلب میں کردوں کیخلاف فوجی کارروائی کے دوران ترکی کے فوجیوں نے جنگی جرائم کا ارتکاب کیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق اقوام متحدہ کے جنگی جرائم سے متعلق اعداد و شمار جمع کرنے والے ايک کميشن کی تازہ رپورٹ شائع ہوئی ہے جس میں شام کے علاقے ادلب میں فوجی کارروائیوں کا گزشتہ برس جولائی سے رواں برس فروری تک کا ہولناک ڈیٹا پیش کیا گیا ہے۔ کمیشن نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا ہے کہ ادلب میں ترک فوجیوں کی کردوں کے خلاف کارروائياں جنگی جرائم کے زمرے ميں آ سکتی ہيں بالخصوص ترک فضائیہ کی بمباری میں کئی معصوم لوگ اپنی جانوں سے گئے۔

رپورٹ میں یہ بھی انکشاف کیا گیا ہے کہ ترکی کے فوجیوں نے زیادہ تر کارروائی کردوں کے رہائشی علاقوں میں کی ہیں جس میں شہریوں کی املاک بھی تباہ ہوئیں اور کئی معصوم لوگ اپنی جانوں سے گئے۔

واضح رہے کہ شام کے صوبہ ادلب میں ترک فوج دہشت گردوں کی حمایت اورشامی کردوں کے خلاف نبرد آزما ہے۔

News Code 1898288

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 8 =