دہلی میں امریکی صدر ٹرمپ کے دورے کے دوران مسلمانوں پر پولیس کا بہیمانہ تشدد

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ بھارت کے دوران نئی دہلی میں پولیس نے شہریت کے متنازع قانون کےخلاف دھرنےپر بیٹھے پرُامن مظاہرین پر حملہ کردیا جس کے نتیجے میں متعدد افراد شہید اور زخمی ہوگئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دورہ بھارت کے دوران نئی دہلی میں پولیس نے شہریت کے متنازع قانون کےخلاف دھرنےپر بیٹھے پرُامن مظاہرین پر حملہ کردیا جس کے نتیجے میں متعدد افراد شہید اور زخمی ہوگئے ہیں۔ بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں پولیس نے شہریت کے متنازع قانون کے خلاف دھرنے پر بیٹھے پرُامن مظاہرین پر دھاوا بول دیا، دہلی کے جعفرآباد اور گوکل پوری کے علاقے میدان جنگ بنے رہے۔ پولیس اہلکاراور بی جے پی کے غنڈوں نے مل کرمظاہرین پر حملہ کردیا، دہشت گرد ہندؤوں نے مظاہرین کو لاٹھیوں اور ڈنڈوں سے تشدد کا نشانہ بنایا جب کہ سڑکوں پر کھڑی گاڑیوں کو آگ لگادی، املاک کو بھی نقصان پہنچایا۔ بی جے پی رہنما نےگزشتہ روز مظاہرین کو تین دن میں دھرناختم کرنےکی دھمکی دی تھی۔واضح رہے کہ مودی حکومت کی جانب سے بھارت میں شہریت کے متنازع قانون کے منظور ہونے کے بعد سے ملک گیر مظاہرے ہورہے ہیں جسے بھارتی پولیس سختی سے کچلنے کی کوشش کر رہی ہے۔ بھارتی پولیس کی مظاہرین پر براہ راست فائرنگ اور تشدد سے درجنوں افراد جاں بحق اور زخمی ہوچکے ہیں جن میں زیادہ تعداد مسلمانوں کی ہے۔

News Code 1898115

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 15 =