پاکستانی والدین کا پاکستانی حکومت سے بچوں کو چین سے واپس بلانے کا مطالبہ

پاکستانی وزیراعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری کی بریفنگ پر چین میں موجود پاکستانی طلباء کے والدین نے سخت احتجاج کرتے ہوئے بریفنگ لینے سے انکار کردیا اور بعد میں مارگلا روڈ ظفر چوک پردھرنا دیتے ہوئے طلباء کو واپس بلانے کا مطالبہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی وزیراعظم کے معاون خصوصی زلفی بخاری کی بریفنگ پر چین میں موجود پاکستانی طلباء کے والدین نے سخت احتجاج کرتے ہوئے بریفنگ لینے سے انکار کردیا اور بعد میں مارگلا روڈ ظفر چوک پردھرنا دیتے ہوئے طلباء کو واپس بلانے کا مطالبہ کیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق پاکستانی وزیراعظم کے سمندر پار معاون خصوصی زلفی بخاری نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور معاون خصوصی صحت ڈاکٹر ظفر مرزا کے ہمراہ چین کے شہرووہان میں پھنسے پاکستانی طلبا کے والدین او پی ایف بوائز کالج اسلام آباد کو بریفنگ دی، والدین کا موقف تھا کہ تین دن میں بچے واپس ورنہ وزارتوں کے سامنے احتجاج ہوگا، والدین نے حکومت کوالٹی میٹم دے دیا، والدین بے قابو ہوگئے اور اسٹیج پر آگئے۔ زلفی بخاری نے کہاکہ حکومت کو ووہان میں پھنسے پاکستانی طلباء کے والدین کی پریشانی کا بخوبی احساس ہے،حکومت چین میں پھنسے پاکستانی طلبا کی مشکلات حل کرنا چاہتی ہے،  ہم نے اپنے ان طلباء اور قوم کو بھی محفوظ رکھنا ہے، ہم اگر فیصلہ کر لیں تو طلبا فوری واپس آ سکتے ہیں روس میں چینی شہریوں کے داخلے پر پابندی عائد کر دی گئی۔

News Code 1897989

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 2 =