ایران کا شام کی مکمل حمایت جاری رکھنے کا عزم /ایران اور شام کے تعلقات برادرانہ اور دوستانہ

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر علی لاریجانی نے شام کی حمایت جاری رکھنے کے پختہ عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران اور شام کے تعلقات ٹیکٹیکل بنیادوں پر نہیں بلکہ برادرانہ اور اصولی بنیادوں پر استوار ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر علی لاریجانی شام کے دورے پر ہیں جہاں انھوں نے شام کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کے ساتھ ملاقات میں شام کی حمایت جاری رکھنے کے پختہ عزم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایران اور شام کے تعلقات ٹیکٹیکل بنیادوں پر نہیں بلکہ برادرانہ اور اصولی بنیادوں پر استوار ہیں۔ مہر نیوز کے مطابق لاریجانی نے کہا کہ ایران اور شام دو برادر اور دوست ملک ہیں اور ایران مشکل شرائط میں کبھی بھی اپنے برادر اور دوست ملک کو تنہا نہیں چھوڑےگا۔ لاریجانی نے کہا کہ خطے میں امریکہ اور اس کے بعض اتحادی عرب ممالک نے دہشت گردی کے فروغ میں بڑا کردار ادا کیا اور شام کو وہابی دہشت گردوں کے ذریعہ بہت بڑا نقصان پہنچایا لیکن اس کے باوجود دہشت گرد اور ان کے حامی اپنے شوم مقاصد میں کامیاب نہیں ہوسکے اور آج شام کی حکومت پہلے سے کہیں زیادہ مضبوط اور قوی ہے۔ مہر خبررساں ایجنسی کے مطابق لاریجانی نے کہا کہ 8 سال قبل ایک عرب ملک کے رہنما نے دورہ تہران کے دوران کہا تھا کہ ایران شام کی حمایت کیوں کررہا ہے شام کا کام بہت جلد تمام ہوجائےگا اور ہم دو ہفتوں کے بعد  دمشق کی اموی  مسجد میں نماز ادا کریں گے ۔ لاریجانی نے کہا کہ ہم نے اس عرب رہنما سے کہا کہ تم شام کی قوم کو نہیں سمجھتے ، شامی قوم اور حکومت اپنا بھر پور دفاع کرےگی اور شام پر کسی غیر علاقائی طاقت کو مسلط ہونے کی اجازت نہیں دےگی۔

لاریجانی نے کہا کہ بعض عرب حکمرانوں نے ہماری بات نہیں سنی اور انھوں نے امریکہ کے اشاروں پر خطے میں دہشت گردی کو فروغ دیا اور آج انھیں بہت بڑی اور تاریخی شرمندگی کا سامنا ہے۔ مہر نیوز کے مطابق اس ملاقات میں شام کی پارلیمنٹ کی اسپیکر حمودہ صباغ نے شام سے دہشت گردی کے خاتمہ میں شامی قوم ، حکومت اور عوام کے ساتھ ایران کے مایہ ناز کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کی کوششوں اور محنتوں کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ خطے سے دہشت گردی کے حاتمہ میں شہید قاسم سلیمانی کا کردار بہت ہی اہم تھا اور شہید سلیمانی کے مدبرانہ اور ذمہ دارانہ کو تاریخ میں سنہری الفاظ کے ساتھ یاد رکھا جائےگا۔

News Code 1897926

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 5 =