ترکی کے صدر کو بھارت کا انتباہ/اپنا گریبان جھانکنے کی سفارش

ترک صدر رجب طیب اردوغان نے مقبوضہ کشمیرکے بارے میں پاکستانی مؤقف کی حمایت کرتے ہوئے کہا تھا کہ کشمیر کی حیثیت ترکی کے نزدیک وہی ہے جو پاکستان کے نزدیک ہے اس پر بھارت نے شدید رد عمل ظاہر کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ترک صدر رجب طیب اردوغان نے مقبوضہ کشمیرکے بارے میں پاکستانی مؤقف کی حمایت کرتے ہوئے کہا تھا کہ کشمیر کی حیثیت ترکی کے نزدیک وہی ہے جو پاکستان کے نزدیک ہے اس پر بھارت نے ترکی کے اس بیان کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ترکی کردوں کے مسائل پر توجہ دے اور شام میں غیر قانونی مداخلت بند کردے یہی اس کے مفاد میں بہتر ہے کشمیر بھارت کا اندرونی معاملہ ہے۔

بھارتی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ ترکی کو اپنے اندورنی معاملات اور مشکلات پر توجہ دینی چاہیے اور اسے ہندوستان کے مسائل پر وقت ضائع نہیں کرنا چاہیے کشمیر ہندوستان کا اندرونی معاملہ ہے۔ ہندوستانی وزارت خآرجہ کا کہنا ہے کہ ہم ترک صدر کے کشمیر کے حوالے سے بیان کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں اور ترکی سمیت کسی بھی ملک کو بھارت کے اندرونی معاملات میںم داخلت کی اجازت نہیں دیں گے۔

News Code 1897868

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 5 =