اسرائیل کی فلسطینیوں کے خلاف تجارتی جنگ کا آغاز/ فلسطینی مصنوعات کی برآمدات پر پابندی

اسرائیل نے امریکی صدرٹرمپ کے ظالمانہ اور یکطرفہ صدی معاملے کے بعد فلسطینی مصنوعات کی برآمدات پر پابندی لگا کر فلسطینیوں کے خلاف تجارتی جنگ کا آغاز کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسرائیل نے امریکی صدرٹرمپ  کے ظالمانہ اور یکطرفہ  صدی معاملے کے بعد فلسطینی مصنوعات کی برآمدات پر پابندی لگا کر فلسطینیوں کے خلاف تجارتی جنگ کا آغاز کردیا ہے۔ اطلاعات کے مطابق فلسطین کے وزیر زراعت ریاض العطاری نے کہا ہےکہ فلسطینی مصنوعات اردن کے راستے عالمی منڈی تک پہنچائی جاتی ہیں تاہم اسرائیل نے تمام برآمدات کنندگان اور متعلقہ فریقین کو مطلع کیا کہ فلسطینی زراعت کی اردن کے راستے برآمدات پر پابندی ہوگی۔  ذرائع کے مطابق تل ابیب حکومت کی جانب سے فلسطینی پیداوار کی برآمد پر پابندی کا آغاز ہوچکا ہے۔

ادھر فلسطینی اتھارٹی کی وزارت اقتصادیات نے کہا ہے کہ اسرائیلی حکام نے فلسطین کی زرعی مصنوعات سے بھرے متعدد ٹرکوں کو  اردن کی کراسنگ لائن سے واپس بھیج دیا ہے۔

News Code 1897715

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 8 =