مودی سرکارنے مقوضہ کشمیر کو بڑی جیل میں تبدیل کردیا

ہندوستان کی سیاسی پارٹی کانگریس کی جنرل سیکرٹری پریانکا گاندھی نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ مودی اور بی جے پی کی حکومت نے کشمیر کو جیل میں تبدیل کر دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی  بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ہندوستان کی سیاسی پارٹی کانگریس کی جنرل سیکرٹری پریانکا گاندھی نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ مودی اور بی جے پی کی حکومت نے کشمیر کو جیل میں تبدیل کر دیا ہے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر بھارت کی بانی جماعت کانگریس کی سیکرٹری جنرل پریانکا گاندھی نے کشمیری سیاست دانوں محبوبہ مفتی اور عمر عبداللہ کی غیرقانونی نظربندی کی مدت میں اضافے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے مطالبہ کیا کہ غیر مسلح، جمہوریت پر یقین رکھنے والے سیاست دانوں کی غیرقانونی نظر بندی کو فوری طور پر ختم کیا جائے۔پریانکا گاندھی نے مزید لکھا کہ محبوبہ مفتی اور عمر عبداللہ جیسے رہنماؤں کو گرفتار کرکے وزیراعظم  مودی نے کشمیر کو ایک قید خانے میں تبدیل کر دیا ہے، کشمیری رہنماؤں کی زباں بندی کیلیے انہیں گرفتار کیا جا رہا ہے، آزادی اظہار رائے پر پابندی ہے اور بنیادی انسانی حقوق معطل ہیں۔

 واضح رہے کہ 5 اگست کو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے بعد سے کئی علاقوں میں تاحال کرفیو نافذ ہے، انٹرنیٹ سروس معطل، ذرائع آمد و رفت موقوف اور کاروباری سرگرمیاں معطل ہیں ۔

News Code 1897703

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 4 =