کورونا وائرس سے پاک چین اقتصادی راہداری کے معاہدے کو خطرہ لاحق

پاکستان میں نئے کورونا وائرس پھیلنے کے خدشات سے پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) کے کچھ پروجیکٹس متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے جنگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان میں نئے کورونا وائرس پھیلنے کے خدشات سے پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) کے کچھ پروجیکٹس متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔  بیجنگ میں صحت سے متعلق حکام کے مطابق چین میں کورونا وائرس سے ہلاکتوں کی تعداد 200تک پہنچ گئی ہے جب کہ جنوبی ایشیا میں بھارت اور نیپال سمیت درجن بھر ممالک میں کورونا وائرس کیسز کی تصدیق ہوئی ہے۔ حکام نے پاکستان سے چین کے لئے پروازیں روک دینے کی تصدیق کی ہے۔ پاکستان میں کورونا وائرس کے شبہے میں71چینی انجینئروں کی اسکریننگ ہو رہی ہے۔ ایک اطلاع کے مطابق لاہور میں اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے پر کام روک دیا گیا ہے۔ چینی ورکرز کو تین دنوں تک اپنے کمپائونڈز تک محدود رہنے کے لئے کہا گیا ہے۔ دی نیوز کے مطابق چین سے پاکستان آنے والے باشندوں کو دو ہفتوں تک اپنے گھروں میں محدود رہنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ چین میں کورونا وائرس کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 9 ہزارسے تجاوز کر گئی ہے۔ پاکستان نے اس ہلاکت خیز وائرس سے نمٹنے میں چین کو اپنے ہر ممکن تعاون کی یقین دہانی کرائی ہے۔ 

چین میں پاکستانی باشندوں کو ہر ممکن تعاون فراہم کرنے پر پاکستان نے چین کا شکریہ ادا کیا ہے۔ پاکستان میں ہوا بازی کے ایڈیشنل سیکرٹری عبدالستار کھوکھر نے پاکستان سے چین کے لئے پروازیں روک دینے کی تصدیق کی ہے۔ ذرائع کے مطابق کورونا وائرس سے چین و پاکستان کے درمیان اقتصادی راہداری کے معاہدے کو خطرات کا سامنا ہے۔

News Code 1897515

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 0 =