امریکی صدر ٹرمپ مواخذے کی کارروائی سے بچ گئے

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ریپبلکن پارٹی کے ارکان کی حمایت کی وجہ سے امریکی سینیٹ میں اپنے خلاف ہونے والی مواخذے کی کارروائی سے بچ گئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایسوسی ایٹڈ پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ ریپبلکن پارٹی کے ارکان کی حمایت کی وجہ سے امریکی سینیٹ میں اپنے خلاف ہونے والی مواخذے کی کارروائی سے بچ  گئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق امریکی سینیٹ میں صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے خلاف گواہان بلانے کی مخالفت میں 51 ارکان کے ووٹ دینے کی وجہ سے مواخذے کی کارروائی عملی طور پر ناکام ہوگئی ہے۔ ریپبلکن کے 51 ارکان نے صدر ٹرمپ کے خلاف گواہان کو سینیٹ میں بلانے کے خلاف ووٹ دیا جب کہ ڈیموکریٹ کے 49 ارکان نے حق میں ووٹ دیا تھا۔

امریکہ کی اپوزیشن جماعت ڈیموکریٹ نے صدر ٹرمپ کیخلاف مواخذے کی کارروائی غیر موثر ہونے کو کانگریس کی تاریخ کا سب سے بدترین واقعہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ گواہان کی عدم موجودگی سے مواخذے کی کارروائی محض علامتی رہ جائے گی۔ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ محض دو ووٹوں کے فرق سے ایک بڑے مسئلے کی زد میں آنے سے بچ گئے ہیں لیکن اس حوالے سے ابھی کچھ بھی کہنا قبل ازوقت ہوگا، حتمی فیصلہ بدھ تک متوقع ہے جس میں مواخذے کی کارروائی کی تفصیلات بھی جاری کی جائیں گی۔

News Code 1897505

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 12 =