صدی معاملہ ناکام ہوجائےگا/ صدی معاملے میں فلسطینیوں کے حقوق نظر انداز

رہبر معظم انقلاب اسلامی کے بین الاقوامی امور کے مشیر ڈاکٹر علی اکبر ولایتی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ فلسطین کے بارے میں امریکہ کا سازش اور فریب پر مبنی صدی معاملہ ناکام ہوجائےگا کیونکہ اس میں فلسطینی عوام کے حقوق کو نظر انداز کیا گیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق رہبر معظم انقلاب اسلامی کے بین الاقوامی امور کے مشیر ڈاکٹر علی اکبر ولایتی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ فلسطین کے بارے میں امریکہ کا فریب اور دھوکے پر مبنی صدی معاملہ ناکام ہوجائےگا کیونکہ اس میں فلسطینی عوام کے حقوق کو نظر انداز کیا گیا ہے۔ ڈاکٹر ولایتی نے ٹرمپ کے صدی معاملے کو فریب اور دھوکے پر مبنی قراردیتے ہوئے کہا کہ جس طرح بیت المقدس میں  امریکہ کی طرف سے سفارتخانہ منتقل کرنے سے اسرائیل کو کوئی فائدہ نہیں پہنچا یا امریکہ کی طرف سے جولان کو اسرائیل کا حصہ قراردینے سے اسرائیل کو کوئی فائدہ نہیں پہنچا، اسی طرح اسرائیل کو صدی معاملے سے بھی کوئی فائدہ نہیں پہنچے گا۔ انھوں نے کہا کہ فلسطینیوں نے پہلے ہی صدی معاملے کو مسترد کردیا ہے اور امریکہ کے اتحادی عرب ممالک کی طرف سے سے صدی معاملے کی حمایت سے بھی امریکہ اور اسرائیل کو کوئی فائدہ نہیں پہنچےگا کیونکہ مسلمان اور خاص طور پر فلسطینی مسلمان امریکہ کے اتحادی عرب ممالک کو بھی امریکی سازش اور دھوکے  کا حصہ سمجھتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ امریکی صدر ٹرمپ کے صدی معاملے کی ناکامی یقینی ہے اس معاملے میں بیت المقدس کو مکمل طور پر اسرائیل کے حوالے کیا گیا ہے جسے مسلمانوں اور فلسطینیوں نے مسترد کردیا ہے۔

News Code 1897426

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 5 =