پاکستانی حکومت کی نواز شریف سے بیماری کی متعلق وضاحت طلب

پاکستان کے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ نواز شریف کی جانب سے پنجاب حکومت کو صرف ایک سرٹیفکیٹ بھیج دیا گیا ہے جس پر حکومت نے نوازشریف اور ان کی قانونی ٹیم سے وضاحت طلب کی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے کہا ہے کہ نواز شریف کی جانب سے پنجاب حکومت کو صرف ایک سرٹیفکیٹ بھیج دیا گیا ہے جس پر حکومت نے نوازشریف اور ان کی قانونی ٹیم سے وضاحت طلب کی ہے۔ اسلام آباد میں تقریب کے دوران وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر نے کہا کہ آزادی اظہار پر کوئی دوسری رائے نہیں ہونی چاہیے، اظہارِ رائے کو آج کے دور میں روکا ہی نہیں جاسکتا نہ ہی ہماری حکومت کی ایسی سوچ ہے۔ حکومت کوئی ایسا قانون نہیں بنا سکتی جس کی معاشرے میں پزیرائی نہ ہو۔ نواز شریف سے متعلق شہزاد اکبر کا مزید کہنا تھا کہ نواز شریف کی ضمانت پر 4 ہفتے کا وقت گزر چکا ہے اور ان کی جانب سے جو رپورٹس بھیجی گئی ہیں ان میں سے دراصل رپورٹ کوئی نہیں ہے، پنجاب حکومت کو صرف ایک سرٹیفکیٹ بھیج دیا گیا ہے،میڈیکل رپورٹس اس سرٹیفکیٹ کے ساتھ منسلک نہیں ہیں، حکومت نے نواز شریف اور ان کی قانونی ٹیم سے وضاحت مانگی ہے، ہم نے پوچھا ہے کہ جس علاج کے لیے آپ گئے ہیں وہ بتائیں کتنا ہوا ہے، نواز شریف کے معاملے پر فیصلہ ضرور ہونا چاہیے، یہاں نواز شریف کے پلیٹلیٹس پر لمحہ بہ لمحہ آگاہ کیا جاتا تھا، جب سے نواز شریف باہر گئے ہیں ، اس معاملے پر مکمل اندھیرا ہے ۔

News Code 1897360

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 9 =