ميانمار کی فوج نے 2 مسلمان خواتین کو قتل کردیا

ميانمار ميں فوج کی گولہ باری اور فائرنگ کے نتیجے میں دو روہنگیا مسلمان خواتین ہلاک ہوگئیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ ميانمار ميں فوج کی گولہ باری اور فائرنگ کے نتیجے میں دو روہنگیا مسلمان خواتین ہلاک ہوگئیں۔ اطلاعات کے مطابق ميانمار کی شمالی ریاست رکھائن کے ایک علاقے پر میانمار فوج نے گولہ باری کی اور بھاری اسلحے سے فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ایک روہنگیا مسلم خاتون موقع پر ہی ہلاک ہوگئی جب کہ دوسری نے اسپتال پہنچ کر دوران علاج دم توڑ دیا۔میانمار فوج نے اپنی روایت دہراتے ہوئے خواتین کی ہلاکتوں کو رخائن کی شدت پسند جماعت پر عائد کرتے ہوئے کہا کہ ایک کارروائی کے دوران عسکریت پسندوں کی فائرنگ کی زد میں دو خواتین بھی آگئیں۔ میانمار فوج کے اسلحے سے خواتین کو کوئی نقصان نہیں پہنچا۔

عالمی عدالت انصاف کی جانب سے میانمار کی سربراہ آنگ سان سوچی کی پیشی پر روہنگیا مسلمانوں کی حفاظت کو ہر حال میں یقینی بنانے کے احکامات کے باوجود میانمار فوج نے اپنی جارحانہ کارروائیاں جاری رکھی ہوئی ہیں اور تاحال روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی رک نہیں سکی ہے۔

News Code 1897319

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 4 =