شہید میجر جنرل قاسم سلیمانی پر امریکہ کے بزدلانہ اورمجرمانہ حملے کو کبھی فراموش نہیں کریں گے

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے شام کے وزير اعظم کے ساتھ ملاقات میں شہید میجر جنرل سلیمانی کی مظلومانہ شہادت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم میجر جنرل قاسم سلیمانی پر امریکہ کے بزدلانہ اورمجرمانہ حملے کو کبھی فراموش نہیں کریں گے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے شام کے وزير اعظم عماد خمیس کے ساتھ ملاقات میں شہید میجر جنرل سلیمانی کی مظلومانہ شہادت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم میجر جنرل قاسم سلیمانی پر امریکہ کے بزدلانہ اورمجرمانہ حملے کو کبھی فراموش نہیں کریں گے۔ شام کے وزير اعظم عماد خمیس نے میجر جنرل قاسم سلیمانی کی امریکہ کے دہشت گردانہ حملے میں مظلومانہ شہادت اور یوکرائن کے طیارہ حادثے میں بعض ایرانی شہریوں کے جاں بحق ہونے پر شامی حکومت اور عوام کی جانب سے ایرانی حکومت اور عوام کے ساتھ ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ میجر جنرل سلیمانی کا غم  ایرانی اور علاقائی عوام کے لئے بہت بڑا غم تھا اور طیارہ حادثے کی وجہ سے یہ غم دوچنداں ہوگیا۔

شام کے وزیر اعظم نے کہا کہ شہید قاسم سلیمانی کا تعلق صرف ایران سے نہیں بلکہ ان کا تعلق تمام حریت پسند قوموں سے ہے۔

صدر حسن روحانی نے کہا کہ شہید میجر جنرل قاسم سلیمانی خطے کے مظلوم اور ستمدیدہ عوام کے بہت بڑے حامی تھے اور انھوں نے خطے میں اسلام اور مسلمانوں کے خلاف امریکہ اور اس کی تشکیل شدہ دہشت گرد تنظیموں کی تمام گھناؤنی سازشوں ناکام بنادیا۔ صدر روحانی نے کہا کہ امریکہ خطے میں اپنے مفادات کو تحفظ فراہم کرنے کی تلاش و کوشش کررہا ہے اور اسے علاقائی ممالک اور عوام کے مفادات سے کوئي دلچسپی نہیں۔ صدر روحانی نے کہا کہ جو لوگ خطے میں امریکہ کو تعاون فراہم کررہے ہیں وہ درحقیقت اسلام اور مسلمانوں کی پشت میں خنجر گھونپ رہے ہیں۔ صدر روحانی نے کہا کہ خطے میں استحکام پیدا کرنے کے لئے امریکی فوج کا انخلا بہت ضروری ہے اور علاقائی ممالک کو اس سلسلے میں اپنی ذمہ داریوں پر عمل کرنا چاہیے۔

News Code 1897027

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 16 =