یوکرائن کا طیارہ غیر دانستہ اور انسانی غلطی کی بنا پر تباہ ہوا

ایران کی مسلح افواج نے ایک بیان صادر کیا ہے جس میں یوکرائن کے طیارے کی تباہی کی وجہ انسانی غلطی قراردیا گیا ہے۔

 مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق ایران کی مسلح افواج نے ایک بیان صادر کیا ہے جس میں یوکرائن کے طیارے کے گرنے کی وجہ انسانی غلطی قراردیا گیا ہے۔ مسلح افواج کے بیان کے مطابق یوکرائن کا طیارہ فنی خرابی کی وجہ سے جب لینڈنگ کے لئے واپس مڑا ہے تو وہ ایران کے ایک حساس فوجی مقام سے گزرتے ہوئے غیر دانستہ طور پر انسانی غلطی کا نشانہ بن گیا جس کی وجہ سے طیارے میں سوار درجنوں ایرانی اور غیر ایرانی مسافر جاں بحق ہوگئے۔ مسلح فوج کے بیان کے مطابق ایران کی مسلح افواج اس وقت امریکہ کے ساتھ جنگ کی حالت میں تھی اور مسلح افواج امریکہ کے کسی بھی حملے کا جواب دینے کے لئے ہائی الرٹ تھیں کیونکہ امریکی حکام نے ایران کے کئی ٹھکانوں پر حملہ کرنے کی دھمکی دے رکھی تھی ۔ لہذا یوکرائن کا طیارہ جونہی ملٹری کے حساس مقام سے گزرا، تو اسے دشمن کا جنگی طیارہ سمجھ کر تباہ کردیا گیا۔ ایرانی مسلح افواج نے اپنے بیان میں اس حادثے میں متاثرہونے والے ایرانی اور غیر ایرانی خاندانوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے معذرت طلب کی ہے اور کہا ہے کہ اس حادثے میں ملوث فرد یا افراد کو فوجی عدالت کے حوالے کیا جائےگا  اور اس سلسلے میں مسلح افواج کے متعلقہ حکام ٹی وی پر قوم کو آگاہ کریں گے۔ ایران میں یوکرائن کا طیارہ گرنے سے 176 افراد جاں بحق ہو گئے تھے، طیارے میں 167 مسافر اور عملے کے 9 افراد سوار تھے۔ مسافر طیارہ تہران سے یوکرائن کے دارالحکومت کیف جا رہا تھا، جس میں کینیڈا، ایران، سوئیڈ اور یوکرائن کے شہری سوار تھے، طیارے میں 82 ایرانی اور 63 کینیڈین شہری سوار تھے۔

ادھر ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف نے ٹویٹر پر جاری پیغام میں کہا یوکرائن کا مسافر طیارہ پاسدران انقلاب کی ملٹری سینٹر کے قریب سے گزر رہا تھا، یوکرائن کے مسافر طیارے کی ساخت دشمن کے جنگی طیارے جیسی تھی، مسلح افواج کی تحقیقات کے مطابق واقعہ انسانی غلطی کے باعث پیش آیا واقعہ پرافسوس اورمتاثرہ خاندانوں سے معذرت چاہتے ہیں۔

News Code 1896924

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 5 =