صدر روحانی کا ٹرمپ کو کرارا جواب/ 52 کا عدد دہرانے کے ساتھ 290 کا عدد بھی یاد رکھیں

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ایران کے 52 مقامات کو نشانہ بنانے کی دھمکی کے جواب میں ایرانی صدر حسن روحانی نےکرارا جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدر کو 52 کا عدد یاد رکھنے کے ساتھ 290 کا عدد بھی یاد رہنا چاہیے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے ایران کے 52 مقامات کو نشانہ بنانے کی دھمکی کے جواب میں ایرانی صدر حسن روحانی نےکرارا  جواب دیتے ہوئے کہا ہے کہ امریکی صدر کو 52 کا عدد یاد رکھنے کے ساتھ 290 کا عدد بھی یاد رہنا چاہیے۔

صدر روحانی نے اپنے ٹوئیٹربیان میں کہا ہے کہ جو لوگ 52 کے عدد کی بات کرتے ہیں انھیں 290 کا عدد بھی یاد رکھنا چاہیے۔ واضح رہے کہ ایران نے امریکہ کے جاسوس خانہ پر انقلاب کے اوائل میں حملہ کرکے 52 امریکی جاسوس سفارتکاروں کو یرغمال بنا لیا تھا اور امریکی صدر نے اسی عدد کی مناسبت سے ایران کے 52 ٹھکانوں کو نشانہ بنانے کی دھمکی دی تھی ۔ جبکہ امریکہ نے ایران کے خلیج فارس میں ایک مسافر طیارے کو نشانہ بنا کر 290 مسافروں کو شہید کردیا تھا۔ صدر روحانی نے اشارہ کیا ہے کہ اگر تم 52 ٹھکانوں کو نشانہ بناؤ گے تو ہم بھی 290 ٹھکانوں کو نشانہ بنائیں گے۔

News Code 1896815

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 7 =