فیض احمد فیض کی نظم کو ہندومخالف کہنا مضحکہ خیز اور جاہلانہ سوچ کا مظہر

بھارت کے معروف شاعر، مصنف اور ادیب جاوید اختر نے ہندوستان کے شہرہ آفاق شاعر فیض احمد فیض کی نظم " ہم دیکھں گے" کا دفاع کرتے وہئے کہا ہے کہ فیض احمد فیض کی نظم کو ہندومخالف کہنا مضحکہ خیز اور جاہلانہ سوچ کی غمازی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارت کے معروف شاعر، مصنف اور ادیب جاوید اختر نے ہندوستان کے شہرہ آفاق شاعر فیض احمد فیض کی نظم " ہم دیکھں گے" کا دفاع کرتے وہئے کہا ہے کہ فیض احمد فیض کی نظم کو ہندومخالف کہنا مضحکہ خیز اور جاہلانہ سوچ کی غمازی ہے۔ جاوید اختر کا کہنا تھا کہ " ہم دیکھیں گے"  کو ہندو مخالف قرار دینا اتنا مضحکہ خیز ہے کہ اس پر بات کرنا ہی ممکن نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ فیض احمد فیض کی نظم آزادی اظہار پر پابندیوں کے خلاف ہے۔ جاوید اختر نے اپنی بات کو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ اس نظم کے خلاف بات کرنا جاہلانہ سوچ ہے۔

News Code 1896708

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 12 =