مقبوضہ کشمیر میں ہائی کورٹ نے تین افراد کو آزاد کردیا

مقبوضہ کشمیر کی ہائی کورٹ نے 3 افراد کی کالے قانون" پبلک سیفٹی ایکٹ " کے تحت نظر بندی کالعدم قرار دے دی اور ان کو رہا کرنے کے احکامات جاری کر دیے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے کشمیر ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کی ہائی کورٹ نے 3 افراد کی کالے قانون" پبلک سیفٹی ایکٹ " کے تحت نظر بندی کالعدم قرار دے دی اور ان کو رہا کرنے کے احکامات جاری کر دیے۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی حکومت کی سیاسی، فوجی اور سماجی دہشت گردی کا سلسلہ جاری ہے ۔ مقبوضہ کشمیر میں مواصلاتی رابطے منقطع ہیں، سخت سردی میں کشمیری مشکلات سے دوچار ہیں۔ انٹرنیٹ کی معطلی کے باعث طلبا اور تاجر سخت پریشان ہیں، مختلف امتحانوں میں شرکت کے خواہش مند سیکڑوں طلبا کو انٹرنیٹ نہ ہونے کے باعث شدید دشواریوں کا سامنا ہے۔

ادھر مقبوضہ کشمیر کے کی ہائی کورٹ نے کالے قانون " پبلک سیفٹی ایکٹ"  کے تحت 3 کشمیریوں کی نظر بندی کالعدم قرار دے دی اور ان کی فوری رہائی کے احکاما ت دے دیئے ہیں۔

News Code 1896584

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 0 =