بھارتی مصنفہ اروندھتی رائے کی بھارتی وزير اعظم پر شدید تنقید

بھارتی مصنفہ اروندھتی رائے نے بھارتی وزير اعظم نریندر مودی پر شدید تنقیدکرتے ہوئے متنازعہ شہریت قانون" این آر سی" اور " سی اے اے " کو بھارت کی روح کے منافی قراردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارتی مصنفہ اروندھتی رائے نے بھارتی وزير اعظم نریندر مودی پر شدید تنقیدکرتے ہوئے متنازعہ شہریت قانون"  این آر سی" اور " سی اے اے "  کو بھارت کی روح کے منافی قراردیا ہے۔ دہلی یونیورسٹی میں تقریر کرتے ہوئے اروندھتی رائے نے کہا کہ بھارتی لاٹھیاں کھانے اور گولیوں کا سامنا کرنے کے لیے پیدا نہیں ہوئے۔بھارتی مصنفہ نے نیشنل رجسٹر آف سٹیزن (این آر سی) کو مسلم آبادی کے خلاف متعصبانہ اقدام قرار دے دیا۔ بھارتی مصنفہ کا کہنا تھا کہ 2002 میں مودی نے جیسا گجرات میں کیا، اب یوگی ویسا ہی اتر پردیش میں کرنے کی تیاری کررہے ہیں، یوپی میں پولیس نے مسلمانوں پر حملہ کیا، ان کے گھروں میں لوٹ مار کی۔  انہوں نے کہا کہ مودی نے بہت بڑے جھوٹ بولے اور ان سب سے لڑنے کے لیے شہریوں کے پاس ایک پلان ہونا چاہیے۔ اروندھتی رائے نے کہا کہ نیشنل پاپولیشن رجسٹر کا عمل نیشنل رجسٹر آف سٹیزن کے لیے ڈیٹا بیس فراہم کرے گا، بھارتیوں کو ایک دوسرے کو تحفظ دینا ہوگا۔

واضح رہے کہ مودی سرکار کی جانب سے متنازع شہریت کے قانون کی منظوری کے خلاف پورے بھارت میں مظاہرے جاری ہیں۔

News Code 1896506

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 0 =