مہاتیر محمد کو بھی عمران خان کے یوٹرن کا پتہ چل گیا

پاکستان مسلم لیگ نون کے مرکزی سیکریٹری جنرل احسن اقبال نے کہا ہے کہ ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد نے وزیر اعظم عمران کی تقریر سے متاثر ہوکر انہیں اجلاس میں بلالیا مگر ان کو کیا پتہ تھا کہ عمران خان ہر بات پر یوٹرن لیتے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان مسلم لیگ نون کے مرکزی سیکریٹری جنرل احسن اقبال نے کہا ہے کہ ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد نے وزیر اعظم عمران کی  تقریر سے متاثر ہوکر انہیں اجلاس میں بلالیا مگر ان کو کیا پتہ تھا کہ عمران خان ہر بات پر یوٹرن لیتے ہیں۔ احسن اقبال نے حکومت پر تنقید کرتےہوئے کہا ہے کہ آج پاکستان کا کیا تماشا بن گیا ہے، معیشت کہاں چلی گئی ہے، عمران خان کے چمچے کہتے تھے عمران آئے گا 200 ارب ڈالر لائے گا،جب سےعمران خان کی حکومت آئی تو 3 ہزار ارب کی چوری کیا ختم ہوگئی ہے۔ احسن اقبال نے کہا کہ عمران خان فارن فنڈنگ کیس کا حساب اس لئے نہیں دیتا کہ فارن فنڈنگ کے ذریعے عمران خان سے پاکستان کی معیشت کو تباہ کرایا گیا۔انہوں نے حکومت سے سوال کیا کہ جب سےعمران خان کی حکومت آئی تو 3 ہزار ارب کی چوری کیا ختم ہوگئی ہے؟ اگر ہوگئی ہے تو پیسہ کس کی جیب میں جارہا ہے ؟ رہنما نون لیگ نے کہا کہ یہ نالائق حکمران اب پاکستان کی ترقی کے لئے خطرہ بن چکا ہے۔ پاکستانی ذرائع کے مطابق عمران خان نے سعودی عرب کے دباؤ میں ملائشیا اجلاس میں شرکت نہ کرکے غلامانہ ذہنیت کا ثبوت دیا ہے۔ ذرائع کے مطابق سعودی عرب امریکہ کا غلام ہے اور پاکستان سعودی عرب کا غلام بن گیا۔

News Code 1896403

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 12 =