امریکہ کی یورپ کو قدرتی گیس فراہم کرنے والی پائپ لائن پر کام کرنے والی کمپنیوں پر پابندی

امریکہ نے یورپ کو قدرتی گیس فراہم کرنے والی روسی پائپ لائن پر کام کرنے والی کمپنیوں پر پابندی عائد کردی جس کے بعد زیر تعمیر " نارڈ اسٹریم 2 " پر کام رک گیا ہے جبکہ جرمنی اور روس نے امریکہ کے اس اقدام کیم ذمت کرتے وہئے اسے اشتعال انگیز قراردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ نے یورپ کو قدرتی گیس فراہم کرنے والی روسی پائپ لائن پر کام کرنے والی کمپنیوں پر پابندی عائد کردی جس کے بعد زیر تعمیر " نارڈ اسٹریم 2 "  پر کام رک گیا ہے۔  اطلاعات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے یورپی ممالک کو قدرتی گیس کی فراہمی کے لیے " نارڈ اسٹریم 2"  نامی زیر تعمیر گیس پائپ لائن میں شامل تعمیراتی کمپنیوں پر پابندیاں عائد کر دی ہیں۔ اس پائپ لائن سے یورپی ممالک کو روس سے قدرتی گیس فراہم کی جانی تھی۔ یورپی ملک جرمنی 738 بلین ڈالر کی لاگت سے تعمیر ہونے والے اس منصوبے کا سب سے زیادہ مستفید ہونے والا ملک ہے اور صدر ٹرمپ کے فیصلے سے امریکہ اور جرمنی کے درمیان تعلقات میں کشیدگی پیدا ہوگئی ہے۔ جرمنی کی سربراہ انجیلا مرکل کی ترجمان نے بھی امریکی پابندیوں کو مسترد کرتے  ہوئے داخلی معاملات میں مداخلت قرار دیا۔ادھر روسی صدر ولادیمیر پوتین نے بھی امریکی پابندیوں پر سخت جوابی اقدام کرنے کے عزم اظہار کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ کو اپنے فیصلوں پر نظر ثانی کرنے کی ضرورت ہے اور ایسے کسی بھی اقدام سے اجتناب برتنا ہوگا جس سے پر امن خطے میں کشیدگی پیدا ہوجائے جو کسی بھی طرح کسی کے بھی حق میں بہتر نہیں ہوگی۔  یورپی یونین نے بھی ان پابندیوں کی شدید مذمت کی ہے۔

News Code 1896386

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 9 + 0 =