بھارت میں ظالمانہ اور مجرمانہ قانون کے خلاف پر تشدد مظاہرے جاری

بھارتی پولیس نے مسلمانوں کے خلاف نسل پرستانہ اور ظالمانہ قانون کے خلاف مظاہرہ کرنے والےعلی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے طلباء اوردہلی میں جامعہ ملیہ کے طلباء پروحشیانہ ظلم و ستم اوربربریت کا ارتکاب کیا ہے۔ ادھر مغربی بنگال میں مظاہرین نے 5 ٹرینوں اور 3 ریلوے اسٹیشنوں کو آگ لگادی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بھارتی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارتی پولیس نے مسلمانوں کے خلاف نسل پرستانہ اور ظالمانہ قانون کے خلاف مظاہرہ کرنے والےعلی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے طلباء  اوردہلی میں جامعہ ملیہ کے طلباء پروحشیانہ  ظلم و ستم اوربربریت کا ارتکاب کیا ہے۔ ادھر مغربی بنگال میں مظاہرین نے 5 ٹینوں اور 3 ریلوے اسٹیشنوں کو آگ لگآدی ہے۔ بھارت میں مسلم مخالف قانون کیخلاف پرتشدد احتجاج، ہنگامے، جلاؤ گھیراؤ، مغربی بنگال میں مظاہرین کے ہاتھوں 5 ٹرینیں، 3 ریلوے اسٹیشنز اور متعدد گاڑیاں نذر آتش، ٹرک ڈرائیور ہلاک، آسام میں سرکاری ملازمین نے کام بند کرنے کا اعلان کردیا، انٹرنیٹ پر پابندی میں 18دسمبر تک توسیع، اسکولز اور کالجز بھی بند کردیے گئے، احتجاجی تحریک میں طلبہ بھی میں میدان میں آگئے، مظاہرین کیخلاف کریک ڈاؤن، درجنوں گرفتار، کانگریس کے سینئر رہنماءایس جے رام رمیش، آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین کے صدر اور بھارتی رکن پارلیمنٹ اسد الدین ایوسی، ترنمول کانگریس کی رہنما مہوا موئترا، آسام اسمبلی میں حزب اختلاف کے رہنما دیوورت سیکیا سمیت کئی سیاستدانوں اور مختلف تنظیموں نے متنازع شہریت قانون کو سپریم کورٹ میں چیلنج کردیا۔

ادھر بھارتی اپوزیشن رہنما اور کانگریس کے سربراہ راہول گاندھی نے کہا ہے کہ وہ اپنے بیان پر معافی نہیں مانگیں گے، انہوں نے اپنے بیان میں مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا تھا کہ بھارت میں حکومت میک انڈیا نہیں ریپ انڈیا کی پالیسی پر عمل پیرا ہے۔

دارالحکومت نئی دہلی میں جامعہ ملیہ اسلامیہ کےاساتذہ اور طلبہ نے احتجاج جاری رکھنے کا اعلان کردیا ہے پولیس نے طلباء کو ظلم و ستم کا نشانہ بنایا جبکہ 50 زائد طلبہ کو گرفتار کرلیا ہے۔

جامعہ ملیہ کی انتظامیہ نے کشیدگی کے پیش نظر 5 جنوری تک تعطیلات کا اعلان کردیا جبکہ تمام امتحانات ملتوی کردیے گئے، ادھر ریاست اتر پردیش میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے طلبہ کو انتظامیہ نے احتجاجی مارچ نکالنے سے روک دیا ہے جبکہ پولیس نے یونیورسٹی میں گھس کر یونیورسٹی کے متعدد کمروں کو آگ لگا دی ہے۔ بھارتی حکومت کی مسلمانوں کے خلاف ظالمانہ اور مجرمانہ پالیسیوں کی وجہ سے ہندوستانبھر میں عوامی مظاہرے شروع ہوگئے ہیں۔

News Code 1896225

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 11 =