ایران کو قرارداد 2231 میں میزائل تجربات سے منع نہیں کیا گیا

اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ ایران کو قرارداد 2231 میں میزائل تجربات سے منع نہیں کیا گیا ہے۔ایران کسی کو اندرونی معاملات میں مداخلت کی اجازت نہیں دےگا۔

مہر خبررساں ایجنسی کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان سید عباس موسوی نے کہا ہے کہ ایران کو قرارداد 2231 میں میزائل تجربات سے منع نہیں کیا گیا ہے۔ایران کسی کو اندرونی معاملات میں مداخلت کی اجازت نہیں دےگا۔

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے تبریز میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایران ہمسایہ ممالک کے ساتھ تعلقات کو ترجیحی بنیادوں پر فروغ دینے کا خواہاں ہے اور ہمسایہ ممالک کے ساتھ اقتصادی اور تجارتی تعلقات کو مضبوط اور مستحکم بنانے کا خواہاں ہے۔

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے برطانیہ کے حالیہ انتخابات کو برطانیہ کا داخلی معاملہ قراردیتے ہوئے کہا کہ برطانیہ کی نئی حکومت سے مشترکہ ایٹمی معاہدے پر عمل کرنے کی کی توقع کی جاتی ہے امید ہے کہ برطانیہ کی نئی حکومت مشترکہ ایٹمی معاہدے میں کئے گئے اپنے وعدوں پر عمل کرےگی۔

ایرانی وزارت خارجہ کے ترجمان نے امریکہ کے میزائل تجربہ کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ امریکہ عالمی سطح پر خطرناک ہتھیاروں کو فروغ دینے کا باعث بن رہا ہے۔

ترجمان نے ایرانی صدر کے دورہ جاپان کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ صدر حسن روحانی عنقریب جاپان کا دورہ کریں گے جاپان ایران کے تیل اہم خریداروں میں شامل تھا جس نے امریکی دباؤ میں ایران کے تیل کی خرید کو متوقف کردیا جوایران کے لئے قابل قبول نہیں اور اس سفر میں دوطرفہ تعلقات اور عالمی امور پر تبادلہ خیال کیا جائےگا۔

News Code 1896178

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 11 =