ایران کے خلاف امریکہ اور سعودی عرب کے دعوے بے بنیاد اور ناقابل اثبات

اقوام متحدہ کے تقتیش کاروں نے سعودی عرب کی تیل کی کمپنی آرامکوکے معائنے کے بعد کہا ہے کہ آرامکو پرحملے میں ایران کے ملوث ہونے کے کوئی شواہد موجود نہیں ہیں اور ایران کے خلاف امریکہ اور سعودی عرب کے دعوے بے بنیاد اور ناقابل اثبات ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے بلومبرگ کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ اقوام متحدہ کے تقتیش کاروں نے سعودی عرب کی تیل کی کمپنی آرامکوکے معائنے کے بعد کہا ہے کہ آرامکو پرحملے میں ایران کے ملوث ہونے کے کوئی شواہد موجود نہیں ہیں اور ایران کے خلاف امریکہ اور سعودی عرب کے دعوے بے بنیاد اور ناقابل اثبات ہیں۔ اطلاعات کے مطابق اقوام متحدہ کے تفتیش کاروں کو آرامکو پر حملے کی تحقیق اور تفتیش کے لئے ستمبر میں سعودی عرب بھیجا گیا تھا ۔ اقوام متحدہ کے تفتیش کاروں نے گذشتہ روز اعلان کیا ہے کہ آرامکو پر حملے کے سلسلے میں ایران کے ملوث ہونے کے شواہد نہیں ملے ہیں اور ایران کے خلاف امریکہ اور سعودی عرب کے دعوے کو ثابت نہیں کیا جاسکتا۔

اقوام متحدہ کے جنرل سکریٹری گوٹرس نے ایران کے متعلق اپنی چھ ماہی رپورٹ میں کہا ہے کہ اقوام متحدہ کے پاس اس بات کے کوئی شواہد موجود نہیں ہیں کہ ابہا ايئر پورٹ اور ارامکو پر حملے ميں استعمال ہونے والے میزائل اور ڈرون ایرانی ساخت کے ہیں یا ایران ان حملوں ميں ملوث ہے۔ واضح رہے کہ امریکہ اور سعودی رعب نے آرامکو پر ہونے والے حملے کا الزام ایران پر عائد کیا تھا جبکہ حملے کی ذمہ داری یمنی فورسز اور قبائل نے قبول کی تھی اور شواہد بھی پیش کئے تھے کہ ارامکو پر حملہ یمنی فورسز اور قبائل نے کیا ہے۔

News Code 1896089

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 1 =