امریکہ میں آن لائن ٹیکسی ڈرائیورز کی 450 خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی

امریکہ میں آن لائن ٹیکسی سروس اوبر کے ڈرائیورز کی جانب سے 2017ء سے 2018ء کے دوران خواتین صارفین کے ساتھ 450 جنسی زیادتی اور 6 ہزار کے لگ بھگ جنسی ہراسانی کے واقعات رپورٹ ہوئے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ میں آن لائن ٹیکسی سروس اوبر کے ڈرائیورز کی جانب سے 2017ء سے 2018ء کے دوران خواتین صارفین کے ساتھ 450 جنسی زیادتی اور 6 ہزار کے لگ بھگ جنسی ہراسانی کے واقعات رپورٹ ہوئے ہیں۔ اطلاعات کے مطابق اوبر امریکہ نے ایک رپورٹ جاری کی ہے جس کے لیے انتظامیہ پر حکومتی اور عوامی دباؤ تھا، رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ 450 خواتین کے ساتھ جنسی زیادتی کی گئی جب کہ 6 ہزار کے قریب جنسی ہراسانی کے واقعات رپورٹ ہوئے ہیں۔ جنسی زیادتی کے واقعات میں اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اوبر گاڑیوں پر بھی جان لیوا حملے ہوئے ہیں جن میں 19 افراد ہلاک ہوئے، ہلاک ہونے والوں میں 8 رائیڈرز، 7 ڈرائیورز اور 4 راہگیر ہلاک ہوئے ہیں۔ اسی طرح ٹریفک حادثے کے 97 واقعات رونما ہوئے ہیں جن میں 107 افراد ہلاک ہوئے۔

واضح رہے کہ آن لائن ٹیکسیوں کا استعمال بہت عام ہوگیا ہے، امریکہ میں 30 لاکھ اوبر گاڑیاں ہیں اور 7 کروڑ صارفین ہیں۔ یہ ایک نفع بخش کاروبار بھی ہے جس سے صارفین کو بھی فائدہ ہوتا ہے تاہم زیادتی اور لوٹ مار کے واقعات بھی رونما ہوتے ہیں۔

News Code 1895984

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 4 =