اتر پردیش میں دلہن نے پہلی بار دولہے کا چہرہ دیکھتے ہی شادی سے انکار کردیا

بھارتی ریاست اتر پردیش میں دلہن نے پہلی بار دولہے کا چہرہ دیکھتے ہی شادی سے انکار کردیا اور تقریب سے اٹھ کرچل گئی۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارتی ریاست اتر پردیش میں دلہن نے پہلی بار دولہے کا چہرہ دیکھتے ہی شادی سے انکار کردیا اور تقریب سے اٹھ کرچل گئی۔ اطلاعات کے مطابق یہ واقعہ کانپور میں سچندی کے علاقے میں پیش آیا جہاں بھارتی روایات کے تحت دلہا اور دلہن نے پہلی بار چہرے سے پردہ ہٹا کر ایک دوسرے کو دیکھنا تھا۔شادی میں دونوں خاندانوں کے قریبی رشتہ دار اور دوست احباب شریک تھے اور خوب گہما گہمی تھی ، روایتی انداز میں دولہے نے دلہن کا گھونگھٹ اٹھایا جس کے بعد دلہن نے جیسے ہی دولہے کا سہرا ہٹایا تو وہ چونک گئی۔ دلہن نے کہا کہ دولہے کے چہرے کی رنگت سانولی ہے اور اس کی عمر بھی زیادہ ہے، خوبصورتی کے معیار پر پورا نہ اترنے پر دلہن نے شادی سے انکار کردیا۔تنازع کھڑا ہوا تو کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچنے کے لیے فوری طور پر پولیس کو بلایا گیا، پولیس نے معاملے کی سنگینی کو سمجھتے ہوئے دلہن سے اس کا موقف سنا ، دلہن نے کہا کہ وہ یہ شادی نہیں کرسکتی اور نہ ہی اس سے زبردستی کی جائے۔ پولیس نے دونوں خاندانوں کے بڑوں سے مذاکرات کیے اور انہیں دلہن کی مرضی سے آگاہ کیا، جس پر اہل خانہ نے دلہن کو سمجھانے کی کوشش کی مگر انہیں ناکامی کاسامنا کرنا پڑا۔دلہن کے انکار پر شادی منسوخ کردی گئی اور تقریب پر آنے والے اخراجات دونوں خاندانوں نے باہمی رضامندی سے مشترکہ طور پر ادا کرنے کا فیصلہ کیا۔

News Code 1895800

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 15 =