بنگلہ دیش میں جماعت اسلامی کے رہنما کی سزائے موت برقرار

بنگلہ دیش کی اعلیٰ عدالت نے جنگی جرائم کے مقدمہ میں جماعت اسلامی کے رہنما کی سزائے موت برقرار رکھی ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے فرانسیسی خبررساں کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بنگلہ دیش کی اعلیٰ عدالت نے جنگی جرائم کے مقدمہ میں جماعت اسلامی کے رہنما کی سزائے موت برقرار رکھی ہے۔  اطلاعات کے مطابق  انہیں آئندہ کچھ ماہ میں پھانسی دے دی جائے گی۔

اطلاعات  کے مطابق اے ٹی ایم اظہر الاسلام اپوزیشن جماعت جماعت اسلامی کے اہم رہنما ہیں جنہیں 1971 میں پاک فوج کے بنگلہ دیش میں آپریشن کے دوران ریپ، قتل اور نسل کشی کے الزام میں 2014 میں پھانسی کی سزا سنائی گئی تھی۔ خیال رہے کہ یہ جماعت اسلامی سے تعلق رکھنے والے چھٹے رہنما ہیں جنہیں جنگ کے دوران کردار پر پھانسی کی سزا دی گئی۔

News Code 1895041

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 4 + 2 =