پاکستان سے کشمیر میں جہاد کی باتیں کرنے والے کشمیریوں کے دشمن ہیں

پاکستانی وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان سے کشمیر میں جہاد کی باتیں کرنے والے کشمیریوں سے دشمنی کررہے ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ایکس پریس کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستانی وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان سے کشمیر میں جہاد کی باتیں کرنے والے کشمیریوں سے دشمنی کررہے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان یوم سیاہ کشمیر پر اپنے پیغام میں کہا ہے کہ مسئلہ کشمیر پر بھارتی وزیراعظم اقوام متحدہ گئے اور اقوام متحدہ نے کشمیریوں کو حق خودارادیت دیا جو انہیں آج تک نہیں ملا، کشمیریوں سے جھوٹے وعدے کیے گئے اور دھاندلی سے انتخابات کرائے گئے، اس آزادی کی تحریک میں اب تک ایک لاکھ کشمیری جاں بحق ہو چکے ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ 5 اگست کو مودی نے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو لگادیا اور ہمیں نہیں پتا کہ اس وقت وہاں کیا حالات ہیں ، مودی نے کہا وہ کشمیر کی خوشحالی کے لیے سب کچھ کر رہے ہیں  اگر نریندرمودی سمجھتے ہیں کہ یہ کشمیریوں کی خوشحالی کے لیے ہے تو وہ ریفرنڈم کرادیں پتہ چل جائے گا کہ کشمیری کہاں کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ  حال ہی میں کشمیر میں ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں مودی کی جماعت بی جے پی کو بری طرح شکست کا سامنا کرنا پڑا جب کہ وہاں تمام سیاسی جماعتوں نے بلدیاتی الیکشن کا بائیکاٹ کیا تھا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان سے جو لوگ کشمیر میں جہاد شروع کرنے کی باتیں کرتے ہیں، وہ پاکستان اور کشمیریوں سے دشمنی کر رہے ہیں، اور یہی ہندوستان چاہتا ہے، مودی نے 9 لاکھ فوج کشمیریوں کو دبانے کے لیے رکھی ہوئی ہے جب کہ ہوسکتا ہے ہندوستان خود مقبوضہ کشمیر میں کوئی کارروائی کرا دے اوراس کا الزام پھر پاکستان پر لگادے۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ  ہم نے کشمیریوں کی سفارتی و اخلاقی مدد کرنی ہے، کشمیر کی تحریک سیاسی ہے اور اس تحریک کو اب کوئی بھی نہیں روک سکتا۔

News Code 1894930

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 8 =