امریکی اور اسرائیلی کٹھ پتلیاں خطے میں سعودی عرب کے تیل سےآگ لگا رہی ہیں

اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کے بین الاقوامی امور کے مشیر نے کہا ہے کہ امریکی اور اسرائیلی کٹھ پتلیاں خطے میں سعودی عرب کے تیل سے آگ لگا رہی ہیں۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کی پارلیمنٹ کے اسپیکر کے بین الاقوامی امور کے مشیر حسین امیر عبداللہیان نے کہا ہے کہ امریکی اور اسرائیلی کٹھ پتلیاں سعودی عرب کے تیل سے خطے میں آگ لگا رہی ہیں۔ امیر عبداللہیان نے داعش دہشت گرد تنظیم کے سربراہ ابو بکربغدادی کی ہلاکت کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ یہ امریکی اور اسرائیلی کٹھ پتلیاں ہیں جو سعودی عرب کے تیل کے ذریعہ خطے میں آگ لگا رہی ہیں۔ ان کٹھ پتلیوں کا کام اسرائیل کو تحفظ فراہم کرنا ہے ۔ امیر عبداللہیان نے کہا کہ ابوبکر بغدادی کو امریکہ نے داعش کی سرپرستی سونپی اور جب اس کا مصرف ختم ہوگیا تو امریکہ نے اس کا کام تمام کردیا ۔ عبداللہیان نے کہا کہ داعش سے وابستہ دہشت گرد اب بھی ادلب میں موجود ہیں جو خطے میں آگ لگانے کے لئے امریکی و اسرائیلی حکم کے منتظر ہیں۔ واضح رہے کہ امریکی صدر ٹرمپ نے کل صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے اعلان کیا تھا کہ شام کے صوبہ ادلب میں امریکہ کے خصوصی فوجی دستے نے داعش کے رہنما ابو بکر بغدادی کو ہلاک کردیا ہے۔ ادھر ترکی کا کہنا ہے کہ ابوبکر بغدادی کی ہلاکت میں اس نے امریکہ کو بھر پور تعاون فراہم کیا ہے۔

News Code 1894929

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 5 + 8 =