افغانستان میں رواں سال بڑے پیمانے پر ہلاکتیں ہوئیں

اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے کی جانب سے جاری اعداد و شمارکے مطابق افغانستان میں رواں برس جنوری سے ستمبر کے دوران مختلف واقعات میں 2 ہزار 563 شہری ہلاک ہوئے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے غیر ملکی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے کی جانب سے جاری اعداد و شمارکے مطابق افغانستان میں رواں برس جنوری سے ستمبر کے دوران مختلف واقعات میں 2 ہزار 563 شہری ہلاک ہوئے۔ اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے (یو این اے ایم اے)   کی جانب سے جاری اعداد و شمار میں ہولناک انکشافات کیے گئے ہیں۔ رواں برس جنوری سے ستمبر کے دوران مختلف واقعات میں 2 ہزار 563 شہری ہلاک ہوئے جن میں 261 خواتین اور 631 بچے شامل ہیں۔ یہ 2014 کے بعد 9 ماہ میں ہلاکتوں کی سب سے بڑی تعداد ہے۔

اقوام متحدہ کے معاون مشن برائے افغانستان (یو این اے ایم اے) کی رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ رواں برس کے 9 ماہ کے دوران دہشت گردی اور جھڑپوں کے واقعات میں 5 ہزار 676 افراد زخمی بھی ہوئے جن میں 662 خواتین اور 18 سو 36 بچے شامل ہیں۔ افغانستان میں دہشت گردی کے واقعات سمیت سکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان ہونے والی جھڑپوں میں 9 ماہ کے دوران 2 ہزار 563 شہری اپنی جانوں سے گئے۔

News Code 1894711

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 10 =