امریکہ نے ترکی کے دو وزارتخانوں اور تین وزراء پر پابندیاں عائد کردیں

امریکی وائٹ ہاؤس نے ترکی کے دو وزارتخانوں اور تین وزراء پر پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے رائٹرز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکی وائٹ ہاؤس نے ترکی کے دو وزارتخانوں اور تین وزراء پر پابندیاں عائد کرنے کا اعلان کیا ہے۔ امریکی نائب صدر مائیک پنس نے اعلان کیا ہےکہ شام کے شمال میں کردوں پر ترکی کے بہیمانہ حملوں کی وجہ سے ترکی کے خلاف تادیبی پابندیاں عائد کی جارہی ہیں ۔ پنس نے امریکی وزير خزانہ اسٹیو منوچن کے ہمراہ وائٹ ہاؤس کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ امریکی صدر نے ترک صدر اردوغان سے ٹیلیفون پر گفتگو کی اور ان سے کہا ہے کہ وہ شام میں جنگ متوقف کرکے ترک فوجیوں کو شام سے فوری طور پر نکال لیں ۔ پنس نے کہا کہ امریکی صدر نے اردوغان پر واضح کیا ہے کہ امریکہ نے ترکی کو شام پر حملے کے سلسلے میں ہری جھنڈی نہیں دکھائی ہے۔ امریکی وزیر خزانہ نے کہا کہ امریکہ نے ترک وزير داخلہ سلیمان سویلو ، وزیر دفاع خلوصی آکار اور انرجی کے وزیر فاتح دونماز پر پابندیاں عائد کردی ہیں۔ امریکہ کا کہنا ہے کہ اگر ترکی نے شام میں کردوں کے خلاف جنگ متوقف کردی تو پابندیاں ختم کردی جائیں گی ورنہ ترکی کی معیشت کو تباہ کردیا جائےگا۔

News Code 1894581

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 4 =