امریکہ کا وہابی دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ کے 4 رہنماؤں کی گرفتاری کا خیر مقدم

امریکہ نے پاکستان کی جانب سے وہابی دہشت گرد اور کالعدم تنظیم لشکر طیبہ کے 4 رہنماؤں کی گرفتاری کا خیر مقدم کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے ڈان کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ امریکہ نے پاکستان کی جانب سے وہابی دہشت گرد اور  کالعدم تنظیم لشکر طیبہ کے 4 رہنماؤں کی گرفتاری کا خیر مقدم کیا ہے۔  اور عندیہ دیا ہے کہ ایسے اقدامات سے دونوں ممالک کے درمیان تعلقات بہتر ہونے میں مدد ملے گی۔

امریکہ کی اسسٹنٹ سیکریٹری اسٹیٹ برائے جنوبی و وسطی ایشیائی امور ایلس ویلز نے کہا کہ " ہم پاکستان کی جانب سے کالعدم لشکرِ طیبہ کے 4 رہنماؤں کی گرفتاری کا خیرمقدم کرتے ہیں"۔

انہوں نے کہا کہ لشکرِ طیبہ کے ظالمانہ حملوں کا نشانہ بننے والے اب اِن افراد کے خلاف قانونی چارہ جوئی دیکھنے کے حقدار ہیں۔

واضح رہے کہ قانون نافذ کرنے والی اداروں نے 10 اکتوبر کو کالعدم تنظیم لشکرِ طیبہ کے 4 اہم رہنماؤں کو دہشت گردی کے لیے مالی معاونت کے الزام میں گرفتار کرنے کا اعلان کیا تھا۔  اعلان میں کہا گیا تھا کہ 4 رہنماؤں کی گرفتاری کے اقدام سے کالعدم تنظیم کی مکمل قیادت کا ٹرائل ہوگا۔

میڈیا رپورٹس میں چاروں رہنماؤں کی شناخت پروفیسر ظفر اقبال، یحییٰ عزیز، محمد اشرف اور عبدالسلام کے نام سے کی گئی۔ اس کارروائی پر پنجاب پولیس کے محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) کے ترجمان نے لاہور میں صحافیوں کو بتایا کہ ’ کالعدم لشکرطیبہ کے سربراہ حافظ سعید قید ہیں اور دہشت گردی کے لیے مالی معاونت کے جرم میں ٹرائل کا سامنا کررہے ہیں، اب اس کالعدم تنظیم کی پوری قیادت کا ٹرائل ہوگا۔

News Code 1894560

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 8 + 9 =