یمنی تنظیم انصار اللہ نے سعودی عرب کے تخت و تاج کو ہلا کر رکھ دیا /شاہی محل میں زلزلہ

کولمبیا کے ایک تجزیہ نگار کا کہنا ہے یمن کی اسلامی تنظیم انصار اللہ نے سعودی عرب کے مکروہ چہرے پر پڑی ہوئی اسلامی نقاب کو اتار کر سعودی عرب کے شاہی محل میں زلزلہ پیدا کردیا ہے اور سعودی عرب کے تخت و تاج کو ہلاکر رکھ دیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی کے بین الاقوامی امور کے نامہ نگار کے ساتھ گفتگو میں کولمبیا کے تجزیہ نگارالیگزینڈر ناگی کا کہنا ہے یمن کی اسلامی تنظیم انصار اللہ نے سعودی عرب کے مکروہ چہرے پر پڑی ہوئی اسلامی نقاب کو اتار کر سعودی عرب کے شاہی محل میں زلزلہ پیدا کردیا ہے اور سعودی عرب کے تخت و تاج کو ہلاکر رکھ دیا ہے۔

کولمبیائی تجزیہ نگار کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان نے جب یمن کے نہتے عربوں کے خلاف جنگ کا آغاز کیا تو اس وقت اس نے غرور اور تکبر کے نشے میں  مست ہوکر کہا تھا کہ یمنی تنظیم انصار اللہ کو دو ہفتوں کی جنگ میں ختم کردیا جائے گا اور جنگ دو ہفتوں میں ختم ہوجائےگی اور اس کے بعد ہم جنگ کو تہران کی سڑکوں پر لڑیں گے۔ کولمبیائی تجزیہ نگار کے مطابق سعودی عرب کے ولیعہد محمد بن سلمان کے یہ دونوں جملے اس کی جہالت ، نادانی اور ناپختگی کا مظہر ہیں ۔جنگ پانچ سال کے قریب پہنچ گئی ہے اور اب سعودی عرب کے تمام اتحادی اور بین الاقوامی حامی اس بات کا اعتراف کررہے ہیں کہ یمن جنگ میں سعودی عرب کو تاریخی شکست اور ذلت و رسوائی کا سامنا ہے۔ الیگزینڈر ناگی کا کہنا ہے کہ یمن کی اسلامی تنظیم انصار اللہ نے سعودی عرب کے تمام خوابوں کو چکناچور کرکے سعودی عرب کے شاہی محل میں زلزلہ پیدا کردیا ہے۔ اس نے کہا کہ سعودی عرب نے امریکہ اور اسرائیل کی حمایت کے نتیجے میں یمن میں بڑے پیمانے پر جنگی جرائم اور انسانی حقوق کی خلاف ورزی کا ارتکاب کیا ہے لیکن اس کے باوجود وہ یمن کے نہتے عربوں کو شکست دینے میں ناکام ہوگیا ہے۔ اس نے کہا کہ اگر انصار اللہ نے آرامکو جیسا ایک اور حملہ کردیا تو سعودی عرب ہر لحاظ سے نیست و نابود ہوجائےگا۔ اس نے کہا کہ سعودی عرب کی علاقائی اور عالمی سطح پر ساکھ ختم ہوگئی ہے اور اب وہ دوسروں سے ثالثی کی درخواست اور التماس کرنے پر مجبور ہوگيا ہے سعودی عرب خود عملی طور پر علاقائی ممالک کے لئے بہت بڑا خطرہ بن گیا ہے۔

News Code 1894512

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 2 + 1 =