پاکستانی کشمیر کے شہریوں کا لائن آف کنٹرول کی طرف مارچ

پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کے شہریوں نے لائن آف کنٹرول کی سمت آزادی مارچ کا آغاز کردیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے پاکستانی ذرائع کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ پاکستان کے زیر انتظام کشمیر کے شہریوں نے لائن آف کنٹرول کی سمت آزادی مارچ کا آغاز کردیا ہے۔اطلاعات کے مطابق جموں کشمیر لبریشن فرنٹ (جے کے ایل ایف) کی کال پر پاکستان کے زیر انتظام کشمیر سے قافلے مظفرآباد پہنچ گئے ہیں ، جنھوں نے چکوٹھی سے لائن آف کنٹرول عبور کرنے کے لئے مارچ شروع کردیا ہے۔ اس مارچ کا مقصد ہندوستان کے زیر انتظام کشمیر میں کرفیو کے نفاذ اور انسانیت سوز مظالم پر عالمی دنیا کی توجہ مبذول کروانا ہے۔ آزادی مارچ میں بزرگ، خواتین اور ہزاروں کی تعداد میں نوجوان شریک ہیں۔ مارچ کے شرکاء کو لائن آف کنٹرول کی طرف بڑھنے سے روکنے کے لئے پاکستانی قانون نافذ کرنے والے اداروں نے حکمت عملی ترتیب دے دی ہے۔ کمشنر مظفرآباد ڈویژن نے کہا ہے کہ مارچ کرنے والے شہریوں پر بھارتی فوج کی فائرنگ اور گولہ باری کا خدشہ ہے، جس سے شہریوں کو شدید جانی نقصان ہو سکتا ہے۔ ادھر پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ لائن آف کنٹرول کی طرف مارچ اور اسے عبور کرنے والے ہندوستان کے ہاتھ مضبوط بنائیں گے۔عمران خان کے مطابق لائن آف کنٹرول کی جانب مارچ کشمیر اور پاکستان کے حق میں نہیں ہے۔

News Code 1894319

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 6 + 8 =