بھارتی وزیراعظم کا ملائشیا سےداعش کے حامی ذاکر نائیک کو حوالے کرنے کا مطالبہ

بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد سے ملاقات کے دوران بھارت میں مفرور قرار دیئے گئے اور ملائیشیا میں پناہ لینے والے داعش دہشت گرد تنظیم کے حامی ذاکر نائیک کو بھارت کے حوالے کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مہر خبررساں ایجنسی نے گلف نیوز کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے ملائیشیا کے وزیر اعظم مہاتیر محمد سے ملاقات کے دوران بھارت میں مفرور قرار دیئے گئے اور ملائیشیا میں پناہ لینے والے داعش دہشت گرد تنظیم کے حامی ذاکر نائیک کو بھارت کے حوالے کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق بھارت کے سیکریٹری خارجہ وجے گوکھلے نے مشرقی اقتصادی فورم اجلاس پر میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ نریندر مودی نے یہ معاملہ مہاتیر محمد سے فورم کی سائیڈ لائنز میں ہونے والی ملاقات کے دوران اٹھایا۔ اطلاعات کے مطابق نریندر مودی کے مطلبے کا ملائشیا کے وزير اعظم نے مثبت جواب دیا ہے۔ ذرائع کے مطابق " اس طرح کے معاملات لیڈر شپ کی سطح پر نہیں دیکھے جاتے، دونوں ممالک کے حکام ایک جگہ بیٹھ کر بات کریں گے کہ ذاکر نائیک کو کس طرح بھارت واپس لایا جاسکے تاکہ وہ وہاں کے قانون کا سامنا کرسکیں"۔ واضح رہے کہ مبینہ طور پر انتہا پسندی پر اکسانے اور منی لانڈرنگ کے الزامات میں ڈاکٹر ذاکر نائیک بھارت کو مطلوب ہیں اور اس سلسلے میں نئی دہلی نے گزشتہ برس ملائیشیا سے انہیں بے دخل کرنے کی درخواست بھی کی تھی ۔ذاکر نائیک داعش کے حامی ہونے کے ساتھ ساتھ یزید ملعون کے مداح بھی ہیں۔

News Code 1893506

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 3 + 5 =