جوہری ادارے کی فعالیت کو مزید تیزکردیا جائےگا/یورپ کے ساتھ کسی نتیجے تک پہنچنا بعید

اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ یورپی ممالک کے ساتھ آج یا کل تک کسی نتیجے تک پہنچنا بعید ہے اور ہم تیسرے مرحلے کے اقدام کا جلد اعلان کریں گے۔

مہر خبررساں ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر حسن روحانی نے کابینہ کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ یورپی ممالک کے ساتھ آج یا کل تک کسی نتیجے تک پہنچنا بعید ہے اور ہم تیسرے مرحلے کے اقدام کا جلد اعلان کریں گے۔

صدر حسن روحانی نے مشترکہ ایٹمی معاہدے سے امریکہ کے خارج ہونے کے بعد ایران کے اقدام کو حکیمانہ اور مدبرانہ قراردیتے ہوئے کہا کہ ایران نے پہلے مرحلے میں 2 ماہ کی فرصت دی اور اسی دوران چین اور روس کے ساتھ مذاکرات بھی انجام دیئے، اگر چہ انھوں نے دوسرے مرحلے میں  اقدام نہ کرنے کی سفارش کی لیکن جب ایران یورپی ممالک کے ساتھ کسی نتیجے تک نہیں پہنچ سکا تو ایران نے بھی مشترکہ ایٹمی معاہدے کی روشنی ميں دوسرا قدم اٹھایا ، اس کے بعد بھی ایران نے اس سلسلے میں مذاکرات انجام دیئے ہیں اور اب یورپی ممالک کے ساتھ مسائل کا فاصلہ کافی کم رہ گیا ہے لیکن کسی حتمی نتیجے تک پہنچنا بعید ہے لہذا ایران جلد ہی تیسرے مرحلے کے اقدام کا اعلان کرےگا۔ صدر حسن روحانی نے کہا کہ تیسرے مرحلے کے اقدام کے بعد بھی 2 ماہ کا موقع دیا جائےگا ، مذاکرات کئے جائیں گے اور اگر کسی نتیجے تک نہ پہنچ سکے تو ایران حساب شدہ اقدامات انجام دےگا۔ انھوں نے کہا کہ وائٹ ہاؤس پرتین گروپوں نسل پرستوں، صہیونیوں اور عرب رجعت پسندوں کا قبضہ ہے اور ان تین گروپوں نے امریکہ کو اغوا کررکھا ہے۔

اگر ان تین گروہوں کو علم ہو جائے کہ ایک دن امریکہ اور ایران کے درمیان منصفانہ تعلقات برقرار ہوجائیں گے تو اس دن یہ گروہ پانی پر موجود خس و خاشاک کی طرف نابود اور محو ہوجائیں گے ۔

صدر حسن روحانی نے دو وزراء کو اعتماد کا ووٹ دینے پر پارلیمنٹ کے نمائندوں کا بھی شکریہ ادا کیا۔

News Code 1893484

لیبلز

آپ کا تبصرہ

You are replying to: .
  • 1 + 2 =